غیرت کے نام پر ہر قتل دہشتگردی نہیں،سپریم کورٹ
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 11/11/2015 - 15:21:21 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 15:17:33 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 15:17:33 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 15:16:30 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 15:16:30 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 15:16:30 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 15:12:58 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 15:03:35 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 15:03:35 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 15:03:35 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 14:59:25
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

غیرت کے نام پر ہر قتل دہشتگردی نہیں،سپریم کورٹ

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11 نومبر۔2015ء)سپریم کورٹ آف پاکستان نے نصیر آباد بلوچستان کے غیرت کے نام پر قتل کے مقدمے میں قرار دیا ہے کہ غیرت کے نام پر ہر قتل دہشتگردی نہیں ، یہ مقدمہ عام عدالت میں چلایا جائے ، ضلعی عدلیہ اور ہائی کورٹ نے یہ قتل کا مقدمہ دہشتگردی عدالت میں بھجوایا تھا عدالت نے فیصلہ بھی کالعدم قرار دے دیا ہے ۔

جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے جمعرات کو مقدمہ کی سماعت کی اس دوران عدالت کو

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/11/2015 - 15:16:30 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان