ایران کے سنی کرد عالم دین کی معمر اور معذور والدہ کی دردمندانہ اپیل
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ نومبر

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 11/11/2015 - 13:57:27 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 13:57:27 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 13:34:21 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 13:31:35 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 13:31:34 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 13:16:06 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 13:13:38 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 13:07:40 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 13:07:40 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 13:07:38 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 13:05:46
پچھلی خبریں - مزید خبریں

ایران کے سنی کرد عالم دین کی معمر اور معذور والدہ کی دردمندانہ اپیل

تہران (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11 نومبر۔2015ء)ایران میں موت کی سزا پر عمل درآمد کے منتظر نوجوان سنی کرد عالم دین شہرام امیری کی والدہ نے ایک کھلے خط میں اپنے بیٹے کی جان بخشسی کی اپیل کرتے ہوئے پیشکش کی ہے کہ وہ بیٹے کی جگہ پھانسی چڑھنے کو تیار ہیں۔شہرام امیری کی معمر والدہ قدم خیر فرامرزی نے ایرانی حکام سے اپیل کی ہے کہ اس کے بیٹے کی جان بخشی کے بدلے اسے پھانسی دے دی جائے اور بخوشی یہ سزا قبول کرنے کو تیار ہیں۔

عرب ٹی وی نے شہرام امیری کو ایران کی انقلاب عدالت کی جانب سے سنائی جانے والی سزا سے متعلق تفصیلی رپورٹ میں بتایا تھا کہ حکام نے کرد سنی عالم دین کو تہران کے شمال مغرب میں رجائی شہر جیل کی کال کوٹھڑی میں منتقل کر دیا ہے، جو اس بات کا اعلان ہے کہ انہیں کسی بھی لمحے تختہ دار پر لٹکا دیا جائے گا۔ایران میں سیاسی اور سول قیدیوں کی ڈیفینس کمیٹی مہم نے کرد سنی عالم دین کی والدہ کی کھلی اپیل نشر کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ان کا چھوٹا بیٹا بہرام احمدی بھی سرکار کی سنائی گئی سزائے موت

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/11/2015 - 13:16:06 :وقت اشاعت