مشر ف آئین شکنی کیس، اسلام آباد ہائیکورٹ نے شوکت عزیز، عبدالحمید ڈوگر اور زاہد ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 10/11/2015 - 22:23:07 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 22:21:56 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 22:21:56 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 22:21:56 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 22:20:10 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 22:20:03 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 22:20:03 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 22:20:03 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 22:19:10 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 22:17:25 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 22:17:25
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

مشر ف آئین شکنی کیس، اسلام آباد ہائیکورٹ نے شوکت عزیز، عبدالحمید ڈوگر اور زاہد حامد کو شریک جرم کرنے کے خصوصی عدالت کے فیصلے کو کالعدم قرار دیدیا

وفاق نے تسلیم کیا ہے کہ مقدمے کی تفتیش میں کچھ خامیاں رہ گئی ہیں جس کو پورا کرنے کی ضرورت ہے، عدالت

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ تازہ ترین ۔۔ آئی پی اے ۔۔10 نومبر۔2015ء)اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق فوجی صدر پرویز مشرف کے خلاف آئین شکنی کے مقدمے میں سابق وزیراعظم شوکت عزیز، سابق چیف جسٹس عبدالحمید ڈوگر اور سابق وزیر قانون زاہد حامد کو شریک جرم کرنے کے خصوصی عدالت کے فیصلے کو کالعدم قرار دے دیا ہے۔عدالت نے تفتیشی اداروں کو حکم دیا ہے کہ وہ خصوصی عدالت کی طرف سے ان تینوں افراد کے بارے میں دیے گئے ریمارکس سے متاثر ہوئے بغیر ان افراد کے خلاف تحقیقات کریں۔

21 نومبر 2014 کو خصوصی عدالت نے سابق فوجی صدر کی درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے تین نومبر 2007 کو ملک میں ایمرجنسی لگانے پر اس وقت کے وزیراعظم، وزیر قانون اور سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کو شریک جرم کرنے کا حکم دیا تھا اور اس کے علاوہ وفاقی حکومت کو حکم دیا تھا کہ وہ اس ضمن میں ترمیم شدہ درخواست خصوصی عدالت میں پیش کریں۔خصوصی عدالت کے اس فیصلے کو سابق وزیراعظم، وزیر قانون اور سابق چیف جسٹس نے اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کیا تھا۔

جسٹس نور الحق قریشی کی سربراہی میں اسلام آباد ہائی کورٹ کے دو رکنی بینچ نے ان درخواستوں کی سماعت کی۔ سماعت کے دوران وفاقی حکومت کی طرف سے کہا گیا تھا کہ حکومت ان تینوں افراد کے خلاف آئین شکنی کے مقدمے میں تفتیش کرنے کو تیار ہے جبکہ ان تینوں افراد کے وکلا نے اس شرط پر شامل تفتیش ہونے پر رضامندی ظاہر کی تھی اگر تفتیشی ادارے خصوصی عدالت کے اْن کے بارے میں ریمارکس

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10/11/2015 - 22:20:03 :وقت اشاعت