فاٹا کی آئینی حیثیت کو متنازعہ بنانا ایک سازش ہے ، عوام کی مرضی کے بغیر کوئی فیصلہ ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 10/11/2015 - 19:22:36 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 19:21:14 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 19:21:13 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 19:21:13 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 19:20:01 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 19:20:01 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 19:18:07 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 19:18:07 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 19:18:07 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 19:16:32 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 19:16:32
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

فاٹا کی آئینی حیثیت کو متنازعہ بنانا ایک سازش ہے ، عوام کی مرضی کے بغیر کوئی فیصلہ قابل قبول نہیں‘ مولانا سمیع الحق

آزاد قبائل کے قانونی حقوق کی مکمل حمایت کرتے ہیں، قبائل کی قانونی حیثیت پر ان سے ریفرنڈم کرایا جائے‘ سربراہ جے یو آئی (س)

لاہور ( اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔10 نومبر۔2015ء) جمعیت علماء اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق نے کہا ہے کہ فاٹا کی آئینی حیثیت کو متنازعہ بنانا ایک سازش ہے ، فاٹا کی عوام کی مرضی کے بغیر کوئی فیصلہ قابل قبول نہیں ،حکومت پہلے ان کی اپنے گھروں میں واپسی کو فی الفور اور باعزت طریقہ سے یقینی بنائیں، ہم آزاد قبائل کے قانونی حقوق کی مکمل حمایت کرتے ہیں، قبائل کی قانونی حیثیت پر ان سے ریفرنڈم کرایا جائے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعیت کی مرکزی مجلس عمومی کے اجلاس کے بعد جامع مسجد کبریٰ لاہور میں پریس کانفرنس میں اجلاس کے فیصلوں کا اعلان کرتے ہوئے کہا ۔اس موقع پر مولانا عبدالرؤف فاروقی، مولانا حامد الحق حقانی، مولانا سید محمد یوسف شاہ، مولانا شاہ عبدالعزیز ،مولانا مفتی حبیب الرحمان درخواستی، مولانا مفتی خالد، مولانا عاصم مخدوم، ظہیر الدین بابر و دیگر دیگر اراکین بھی شریک تھے ۔

اجلاس میں چاروں صوبوں میں تربیتی کنونشنوں کا فیصلہ کیا۔ 22-23-24-25نومبر کو پنجاب کے آٹھ ڈویژنوں میں کنونشن منعقد ہونگے۔ دسمبر میں صوبہ سندھ بلوچستان اور کے پی کے میں کنونشن منعقد ہونگے جسمیں مرکزی قائدین شرکت کرینگے ۔اجلاس میں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10/11/2015 - 19:20:01 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان