صنعتی و تجارتی ترقی کیلئے ایف پی سی سی آئی کے ایگزیکٹیو و جنرل باڈی ممبران اپنا ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 10/11/2015 - 16:09:32 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 16:09:32 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 16:09:32 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 16:08:19 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 16:05:36 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 16:05:36 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 16:04:22 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 16:01:58 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 16:01:58 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 15:58:21 وقت اشاعت: 10/11/2015 - 15:58:20
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

صنعتی و تجارتی ترقی کیلئے ایف پی سی سی آئی کے ایگزیکٹیو و جنرل باڈی ممبران اپنا قائدانہ کردار ادا کریں،سینیٹر حاجی غلام علی

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔10 نومبر۔2015ء ) بزنس کمیونٹی کی مشکلات اور صنعتی و تجارتی ترقی کیلئے ایف پی سی سی آئی کے ایگزیکٹیو و جنرل باڈی ممبران اپنا قائدانہ کردار ادا کریں ۔ اس وقت ملک میں صنعت و تجارت ایک مشکل دور سے گزر رہی ہے اور ایف پی سی سی آئی میں صرف ذاتی تشخص ابھارنے کیلئے چند لوگ کوشش کر رہے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ گزشتہ سال پیش ہونے والے وفاقی بجٹ کیلئے ایف پی سی سی آئی کی طرف سے حکومت کو بھیجی جانے والی کوئی تجویز نہیں مانی گئی ۔

چھوٹے تاجر ود ہولڈنگ ٹیکس کے خلاف ہڑتالوں تک جا پہنچے اور احتجاج سڑکوں پر ہوتا رہا جبکہ دوسری طرف ایف پی سی سی آئی کی کٹھ پتلی انتظامیہ تاجروں پر ود ہولڈنگ ٹیکس کا بم گرانے پر خیر مقدمی اشتہارات دے رہی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ 2010ء میں بزنس کمیونٹی اور حکومت کے درمیان دوریوں کے خاتمے کیلئے جو کردار ادا کیا انشاء اللہ اس سے بڑھ کر کردار ادا کیا جائیگا۔

ان خیالات کا اظہار ایف پی سی سی آئی کے صدارتی امیدوار سینیٹر حاجی غلام علی نے مردان ‘ ہری پور چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور آل پاکستان کمرشل ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن کے ایگزیکٹیو اور جنرل باڈی ممبران محمد سجاد خان ‘ محمد حسین ‘ محمد ریاض خٹک ‘ ملک رشید محمود ‘ منظور الٰہی ‘ معمورخان ‘ منہاج باچا ‘ اور مشتاق احمد پر مشتمل وفود سے ملاقات کے دوران کہیں ۔

اس موقع پر ان کے ہمراہ ٹرائبل ایریا چیمبر آف کامرس کے صدر شاہد الرحمن بھی موجود تھے ۔ وفد سے ملاقات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایف پی سی سی آئی کو حکومت کے ذمہ داروں وزراء اور ایف بی آر کیلئے دوسرا ایوان تاجران بنا یا جائیگا جس میں حکومت کے اہم ذمہ داران ‘ وزراء اور ایف بی آر سمیت دیگر محکموں کے سربراہان آکر تاجر برادری کے مسائل سنیں گے اور ان کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائیگا ۔

کیونکہ وقت کا تقاضا ہے کہ بزنس کمیونٹی ‘حکومت اور ادارے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10/11/2015 - 16:05:36 :وقت اشاعت