قصور میں لڑکوں سے زیادتی کے اسکینڈل کی تحقیقات رپورٹ مکمل کرلی گئی
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 09/11/2015 - 22:12:37 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 22:11:09 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 22:11:09 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:54:32 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:54:32 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:52:42 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:49:07 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:49:07 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:46:32 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:44:30 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:43:14
پچھلی خبریں - مزید خبریں

قصور

قصور میں لڑکوں سے زیادتی کے اسکینڈل کی تحقیقات رپورٹ مکمل کرلی گئی

قصور(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار.9 نومبر 2015 ء) قصور میں لڑکوں سے زیادتی کے اسکینڈل کی تحقیقات رپورٹ مکمل کرلی گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق قصور میں لڑکوں سے زیادتی کے اسکینڈل کی تحقیقات کرنے والی جے آئے ٹی نے اپنی رپورٹ مکمل کرلی ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 284 سے زائد لڑکوں سے زیادتی ثابت نہیں ہوسکی ہے۔ زیادتی کے 20 مقدمات میں 17 لڑکوں سے زیادتی ثابت ہوئی ہے۔

اس حوالے سے 47 ویڈیو کلپس اور 72 تصویروں کی فرانزک تحقیق کروائی گئی۔ ویڈیو اسکینڈل اچھالنے والے مرکزی کردار مبین غزنوی کا اپنا کردار مشکوک ثابت ہوا ہے جس نے کئی لڑکے اور لڑکیوں سے تعلقات کا اعتراف کیا ہے۔ ویڈیو اسکینڈل اچھالنے کا مقصد خود نمائی اور مخالفین کو نیچا دکھانا تھا۔ اس کیس کے مرکزی ملزم حسیم عامر سمیت 18 ملزمان کے چالان عدالت بھجوا دیے گئے ہیں۔

09/11/2015 - 21:52:42 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان