سینیٹر سراج الحق کی یوم اقبال ؒ کے موقع پر مزار اقبال پر حاضری،قبر پر پھول چڑھائے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:44:30 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:43:14 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:43:14 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:43:14 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:37:26 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:37:26 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:37:26 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:36:25 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:36:23 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:36:23 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:32:45
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

سینیٹر سراج الحق کی یوم اقبال ؒ کے موقع پر مزار اقبال پر حاضری،قبر پر پھول چڑھائے ، فاتحہ خوانی کی

علامہ اقبال ایک نظریے ، فلسفے اور جہد مسلسل کا نام ہے ،حکومت فکر اقبال ؒکی وارث نہیں بنتی تو نہ بنے ملک کے اٹھارہ کروڑ عوام اقبال کے مشن کے وارث ہیں، اسے منزل تک پہنچائیں گے،امیر جماعت اسلامی کی میڈیا سے گفتگو

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔9 نومبر۔2015ء )امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے یوم اقبال ؒ کے موقع پر مزار اقبال پر حاضری دی ، ان کی قبر پر پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی ۔سینیٹر سراج الحق نے مزار اقبال ؒکے باہر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ علامہ اقبال ایک نظریے ، فلسفے اور جہد مسلسل کا نام ہے ۔ حکومت فکر اقبال ؒکی وارث نہیں بنتی تو نہ بنے ملک کے اٹھارہ کروڑ عوام اقبال کے مشن کے وارث ہیں اور اسے منزل تک پہنچائیں گے ۔

انہوں نے کہاکہ مصور پاکستان نے مملکت پاکستان کا جو تصور پیش کیا تھا اس سے روگردانی کر کے ہم ترقی و خوشحالی کی منزل کو حاصل کر سکتے ہیں نہ ایک باوقار قوم کے طور پر اپنی شناخت قائم رکھ سکتے ہیں ۔ پاکستان محض زمین کا ایک ٹکڑا نہیں یہ اسلامی نظریہ حیات کی ایک تجربہ گاہ اور اسلامی فلاحی ریاست کا نمونہ ہے جس کے اقتدار پر مسلط فلسفہ خودی سے ناآشنا لوگوں نے اسے اغیار کے سامنے بے توقیر کر دیاہے ۔

انہوں نے کہاکہ پاکستان علامہ اقبالؒ کے خوابوں کی تعبیر ہے اس میں لبرل ازم اور سیکولر ازم کے خواب دیکھنے والوں کو ناکامی ہوگی ۔ انہوں نے وزیراعظم کے لبرل پاکستان کے بیان پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان کی خاطر لاکھوں جانوں کی قربانی دے کر انگریز سے آزادی اس لیے حاصل نہیں کی گئی تھی کہ یہاں وہی مغربی جمہوریت اور سیکولر ازم مسلط کر دیا جائے ۔

انہوں نے کہاکہ برصغیر کے مسلمانوں نے تاریخ انسانی کی سب سے بڑی ہجرت اس لیے کی تھی کہ یہاں وہ لا الہ الا اﷲ کے نظام کے تحت اپنی زندگی گزار سکیں ۔ انہوں نے کہاکہ خود قائد اعظم محمد علی جناح ؒ نے اپنی 114تقاریر اور خطابات میں پاکستان کو ایک اسلامی فلاحی مملکت قرار دیا اور فرمایاتھاکہ پاکستان کے شہریوں کو قرآن و سنت کے مطابق زندگی گزارنے کے مواقع حاصل ہوں گے ۔

ہمارا دستور قرآن ہے اور یہاں شریعت کی حکمرانی ہو گی ۔سراج الحق نے کہاکہ ہم پاکستان کو اسلام کا گہوارا اور علامہ اقبال اور قائداعظم کا پاکستان بنا کر دم لیں گے ۔ انہوں نے کہاکہ ہم ایسا پاکستان چاہتے ہیں جس میں عام آدمی کو بھی وہی حقوق حاصل ہوں جو حکمرانوں کو حاصل ہیں اور یہاں طبقاتی اور استحصالی نظام نہ ہو ۔ تعلیم ، صحت اور باعزت روزگار کی سہولتیں عام ہوں اور پاکستان بھی مدینہ منورہ کی فلاحی ریاست کا نمونہ بن سکے ۔

سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ امت مسلمہ کی عزت اور مستقبل اﷲ کے نظام کے ساتھ وابستہ ہے ۔ علامہ اقبال اتحاد امت کے سب سے بڑے داعی تھے اور عالم اسلام کو مسلکی اور فروعی اختلافات سے نکال کر وحدت کی لڑی میں پروناچاہتے تھے ۔ انہوں نے کہاکہ ترکی سیکولرازم سے اسلام کی طرف آرہاہے حالانکہ اس کا آئین سیکولر ہے جبکہ ہمارے عاقبت نا اندیش حکمران

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09/11/2015 - 21:37:26 :وقت اشاعت