افغانستان ، طالبان کے 2 دھڑوں میں جھڑپیں جاری ،ہلاک جنگجوؤں کی تعداد 110ہوگئی
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر نومبر

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:50:23 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:50:23 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:50:23 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:36:23 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:34:48 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 21:34:48 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 20:39:11 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 20:28:36 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 20:26:01 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 19:02:19 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 18:40:07
پچھلی خبریں - مزید خبریں

افغانستان ، طالبان کے 2 دھڑوں میں جھڑپیں جاری ،ہلاک جنگجوؤں کی تعداد 110ہوگئی

اسطرح کا ظالمانہ اقدام دشمن کی شکست اور مایوسی کا ثبوت ہے ،اشر ف غنی

کابل (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔9 نومبر۔2015ء) افغانستان میں طالبان کے2 مخالف دھڑوں میں جھڑپوں کے نتیجے میں ہلاک جنگجوؤں کی تعداد110 ہوگئی ،طالبان لیڈر ملا اختر منصور اور داعش کے حمایت یافتہ ملا منصور داد اﷲ کے وفاداروں کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ تین روز قبل ضلع ارغنداب میں شروع ہوا تھا۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق زابل پولیس کے سربراہ کرنل غلام جیلانی کا کہنا ہے کہ لڑائی کاسلسلہ ضلع خاک افغان اور دائی چوپان کے اضلاع تک پھیل گیا ہے ، داعش جنگجوؤں کی ایک بڑی تعداد طالبان میں شمولیت اختیار کی ہے جبکہ عسکریت پسندوں جانی نقصان بھی اٹھانا پڑا ہے۔

ضلع ارغنداب کے سربراہ حاجی مہمند نے تصدیق کی ہے کہ لڑائی ضلع خاک افغان کی سوڈانی پہاڑیوں پر ہورہی ہے جس میں اختر منصور کے 25 وفادار جنگجو اور منصور داد اﷲ کے 85وفادار جنگجو مارے جاچکے ہیں جبکہ دونوں جانب سے 30 سے زائد جنگجو زخمی بھی ہوئے ہیں۔انکا کہنا تھاکہ بدنام ازبک کمانڈر اپنے ساتھیوں سمیت اختر منصور کے ساتھ شامل ہوگیا ہے ۔ پچھلیتین دنوں سے جاری

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09/11/2015 - 21:34:48 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان