اربوں ڈالر قرض لینے کے باوجود ملک دیوالیہ ہو رہے ہیں،میاں زاہد حسین
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر نومبر

مزید تجارتی خبریں

وقت اشاعت: 09/11/2015 - 16:54:35 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 16:52:20 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 16:50:56 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 16:50:55 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 16:48:23 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 16:40:19 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 16:39:40 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 15:29:34 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 15:02:47 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 14:10:24 وقت اشاعت: 09/11/2015 - 14:06:31
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

اربوں ڈالر قرض لینے کے باوجود ملک دیوالیہ ہو رہے ہیں،میاں زاہد حسین

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔9 نومبر۔2015ء)پاکستان بزنس مین اینڈ انٹلیکچولز فور م وآل کراچی انڈسٹریل الائنس کے صدر، بزنس مین پینل کے فرسٹ وائس چےئر مین اور سابق صوبائی وزیر میاں زاہد حسین نے کہا ہے کہ اربوں ڈالر قرض لینے کے باوجود بہت سے ممالک کی اقتصادی صورتحال کمزور ہے جبکہ کئی دیوالیہ ہو رہے ہیں جس کی وجہ آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک جیسے اداروں میں ڈکٹیٹر شپ اور مغربی ممالک کے مفادات کی آبیاری ہے ۔

یہ ادارے قرض خواہ ممالک کے معاشی مسائل حل کرنے کے بہانے امریکہ اور یورپ کے سیاسی مفادات کو پروان چڑھاتے ہیں جسکی وجہ سے ترقی پزیر ممالک کی معیشت کو کوئی خاص فائدہ نہیں ہوتا مگر قرض کا بوجھ بڑھتا جاتا ہے جسکا نتیجہ عوام میں غربت اور ملک کی غلامی ہوتا ہے۔میاں زاہد حسین نے یہاں جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا کہ ان اداروں کی پالیسیوں کی وجہ سے غربت کم نہیں ہوئی بلکہ اس میں اضافہ ہوا ۔

بظاہر ان دونوں اداروں کو188 ممالک کی عمل داری ہے مگر حقیقت میں ان پر چند طاقتور مغربی ممالک میں مکمل کنٹرول ہے جبکہ امریکہ اسکے ہر فیصلے کو ویٹو کر سکتا ہے۔جب تک ساری دنیا میں جمہوریت اورشفافیت کا ڈھول پیٹنے والے ان اداروں میں جمہوریت اور احتساب کا موثر نظام رائج نہیں کیا جاتا دنیا کے مصائب کم ہونے کے بجائے بڑھتے ہی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09/11/2015 - 16:40:19 :وقت اشاعت