افغان طالبان کے دو مخالف د ھڑوں کے درمیان لڑائی میں 50 عسکریت پسند ہلاک ، جھڑپوں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
اتوار نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 08/11/2015 - 21:59:44 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 21:59:02 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 21:59:02 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 21:30:51 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 21:21:22 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 21:21:22 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 21:21:21 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 20:42:49 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 20:42:49 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 20:42:02 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 20:42:02
پچھلی خبریں - مزید خبریں

افغان طالبان کے دو مخالف د ھڑوں کے درمیان لڑائی میں 50 عسکریت پسند ہلاک ، جھڑپوں کا آغاز خاک افغان اور ارغن داب اضلاع میں ہوا ، ملا رسول گروپ کے 60 ، اختر منصور گروپ کے 20 جنگجو مارے جا چکے ہیں ، ڈپٹی پولیس چیف زابل غلام جیلانی

کابل (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔8نومبر۔2015ء)افغانستان میں طالبان کے دو مخالف د ھڑوں کے درمیان جھڑپوں کے دورا ن 50 عسکریت پسند ہلاک ہوگئے ،ملا رسول گروپ کو داعش کی حمایت حاصل ہے ۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق جنوب مشرقی صوبے زابل کے ضلع ارغن داب کے گورنر محمد نوسترایار نے بتایا ہے کہ پچھلے دو دنوں سے جاری جھڑپوں میں علیحدہ ہونے والے ملا محمد رسول کے دھڑے کودولت اسلامیہ کے شدت پسندوں کی مدد حاصل ہے۔

زابل صوبے کے ڈپٹی پولیس چیف غلام جیلانی نے بتایا کہ جھڑپوں کا آغاز ہفتہ کی صبح خاک افغان اور ارغن داب اضلاع میں ہوا اور اب تک ملا رسول گروپ کے 60 جبکہ اختر منصور گروپ کے 20 جنگجو مارے جا چکے ہیں۔یہ دونوں اضلاع طالبان کنٹرول میں ہیں اور یہ واضح نہیں ہو سکا کہ غلام جیلانی کے پاس یہ اعداد و شمار کیسے پہنچے۔زابل صوبے کے گورنر کے ترجمان اسلام گل سیال نے لڑائی کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ جھڑپیں جاری ہیں۔

ملا اختر منصور کے مخالف عسکریت پسندوں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

08/11/2015 - 21:21:22 :وقت اشاعت