ڈاکٹروں کی اکثریت حکومت کے اصلاحاتی اقدامات کی حامی،خالی آسامیاں ہنگامی بنیادوں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
اتوار نومبر

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 08/11/2015 - 17:03:13 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 17:01:39 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 17:01:39 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 17:01:39 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 16:59:40 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 16:59:40 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 16:59:39 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 16:56:03 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 16:56:03 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 16:56:02 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 16:54:30
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

ڈاکٹروں کی اکثریت حکومت کے اصلاحاتی اقدامات کی حامی،خالی آسامیاں ہنگامی بنیادوں پر پُر کریں گے،شہرام ترکئی

پشاور۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔8 نومبر۔2015ء)خیبر پختونخوا کے سنیئر وزیر و وزیر صحت شہرام خان ترکئی نے کہاہے کہ ڈاکٹروں کی اکثریت صوبائی حکومت کے اصلاحاتی اقدامات کی حمایت کرتی ہے مگر مٹھی بھر عناصر ذاتی مفادات کیلئے ان کی مخالفت کررہے ہیں ۔حکومت صحت کے شعبے میں ایسا نظام لانا چاہتی ہے جس سے مریضوں اور عوام کے ساتھ ساتھ ڈاکٹروں اور دیگر طبی عملے کا بھی فائدہ ہو۔

وہ پشاور میں ڈاکٹروں کی تنظیم کے ایک وفد سے گفتگو کررہے تھے جس نے اُن کے دفتر میں اُن سے ملاقات کی اور صحت کے شعبے میں موجودہ صوبائی حکومت کے اصلاحاتی اقدامات پر عملدرآمد اور اس سلسلے میں ڈاکٹر برادری کے کردار پر تبادلہ خیال کیا ۔وزیر صحت نے کہا کہ وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے احکامات کی روشنی میں صوبے کے ہسپتالوں میں ڈاکٹروں کی کمی کو پوری کرنے کے لئے ہنگامی اقدامات کئے جارہے ہیں اور اس سلسلے میں ایف سی پی ایس پاس نوجوانوں کوواک ان انٹرویو کے ذریعے بطور کنسلٹنٹس ڈاکٹر بھرتی کیا جارہا ہے ۔

نئے بھرتی ہونے والے ان کنسلٹنٹس( ڈاکٹروں) کو اُن کی مرضی کے ہسپتالوں میں تعینات کیا جائے گا اور اُنہیں پُر کشش تنخواہ اور مراعات دی جائیں گی جس کے لئے اگلے چند دنوں کے اندر اخبارات میں اشتہارات دیے جائیں گے ۔ انھوں نے وفد کو بتایا کہ تدریسی ہسپتالوں کے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

08/11/2015 - 16:59:40 :وقت اشاعت