بیرونی قرضوں سے حاصل شدہ رقوم سے زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافے کے باوجود روپے کی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
اتوار نومبر

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 08/11/2015 - 15:41:50 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 15:41:50 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 15:39:41 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 15:39:41 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 15:39:41 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 15:38:19 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 15:38:19 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 15:38:19 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 15:36:42 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 15:36:42 وقت اشاعت: 08/11/2015 - 15:36:42
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

بیرونی قرضوں سے حاصل شدہ رقوم سے زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافے کے باوجود روپے کی قدر میں کمی پاکستانی معیشت کیلئے باعث تشویش

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔8 نومبر۔2015ء) بیرونی قرضوں سے حاصل شدہ رقوم سے زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافے کے باوجود روپے کی قدر میں کمی لائی جا رہی ہے،جو پاکستانی معیشت اور زرمبادلہ کے ذخائر کے لئے خطرناک ثابت ہوسکتے ہیں ۔ حکومتی نمائندوں کے دعوؤں کے مطابق پاکستان کے بیرونی زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافہ ہوا ہے حالانکہ ٹیکس وصولی میں کمی کے ساتھ ساتھ بیرونی سرمایہ کاری بھی کم ترین سطح پر ہے اس کے علاوہ برآمدات بھی جمود کا شکار ہیں ۔

پھر بھی پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافہ ہو رہا ہے ۔ زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافے کی وجہ بیرونی قرضے کہا جائے تو بے جا نہ ہو گا ۔ حکومت نے سکوک بانڈ اور یورو بانڈ پر زیادہ شرح واپسی کی پیش کش دے کر 3 ارب ڈالر حاصل کر لئے ہیں اور مرکزی بنک کو آئی ایم ایف سے 50 کروڑ ڈالر ملے اس کے بعد انٹرنیشنل بانڈز کی مد میں 50 کروڑ ڈالر حاصل کئے گئے اور اتحادی سپورٹ فنڈ کے تحت 37 کروڑ 60 لاکھ ڈالر ملے ہیں ۔

آئی ایم ایف کے مطابق ٹیکس حصولی میں مطلوبہ ہدف

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

08/11/2015 - 15:38:19 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان