بجٹ اجلاس کے دوران اپوزیشن جماعتوں کااحتجاج اور بائیکا ٹ غیر مناسب اور غیر جمہوری ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر جون

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 15/06/2015 - 23:01:09 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 22:59:45 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 22:54:15 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 22:54:15 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 22:41:52 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 22:41:52 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 22:41:52 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 22:39:21 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 22:39:21 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 22:38:05 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 22:35:42
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

بجٹ اجلاس کے دوران اپوزیشن جماعتوں کااحتجاج اور بائیکا ٹ غیر مناسب اور غیر جمہوری تھا، مشتاق احمدغنی

ہر چیزکو مدنظررکھتے ہوئے ایک متوازن بجٹ پیش کیا ہے۔رواں مالی سال کے بجٹ کے مقابلے میں بجٹ2015-16میں شعبہ تعلیم کے بجٹ میں20فیصد جبکہ سالانہ ترقیاتی پروگرام کے بجٹ میں 36فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔ بجٹ اجلاس کے دوران اپوزیشن جماعتوں کااحتجاج اور بائیکا ٹ محض شور شرابہ کے سوا کچھ نہیں تھا،وزیراطلاعات خیبرپختونخوا مشتاق غنی کی میڈیا سے گفتگو

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 15 جون۔2015ء)خیبر پختونخوا کے وزیر اطلاعات و تعلقات عامہ اور اعلیٰ تعلیم مشتاق احمد غنی نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت نے ہر چیزکو مدنظررکھتے ہوئے ایک متوازن بجٹ پیش کیا ہے۔رواں مالی سال کے بجٹ کے مقابلے میں بجٹ2015-16میں شعبہ تعلیم کے بجٹ میں20فیصد جبکہ سالانہ ترقیاتی پروگرام کے بجٹ میں 36فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔

بجٹ اجلاس کے دوران اپوزیشن جماعتوں کااحتجاج اور بائیکا ٹ محض شور شرابہ کے سوا کچھ نہیں تھا۔اپوزیشن جماعتوں کارویہ غیر مناسب اور غیر جمہوری تھا۔ پیر کے روزبجٹ اجلاس کے بعد صوبائی اسمبلی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اطلاعات کاکہناتھاکہ اپوزیشن جماعتوں کوصوبہ میں بلدیاتی نظام ہضم نہیں ہو رہا ہے یہ جماعتیں نہیں چاہتیں کہ اقتدار نچلی سطحی پر عوام کے ہاتھوں میں منتقل کیاجائے۔

اپوزیشن جماعتوں کے اراکین اسمبلی نے بجٹ سنے بغیر ہلڑ باڑی کا مظاہرہ کیاجو اس بات کا ثبوت ہے کہ وہ صوبے کی ترقی و خوشحالی کی بجائے صرف اقتدار کے حصول کے خواہاں ہیں صوبائی حکومت نے تمام جمہوری طریقوں سے اپوزیشن جماعتوں کو تمام ایشوز پر مذاکرات کی دعوت دی ہے کیونکہ تحریک انصاف کی قیادت مسائل کو مذاکرات کی میز پر حل کرنے پر یقین رکھتی ہے۔

انہوں نے کہاکہ بجٹ2015-16میں شعبہ تعلیم کے لئے 114ارب روپے مختص کئے گئے ہیں۔اعلیٰ تعلیم کے شعبے میں شامل منصوبوں کے لئے مالی سال2015-16میں5ارب51کروڑ80لاکھ روپے مختص کئے گئے ہیں جوکل67منصوبوں پر خرچ ہوں گے ان میں39جاری منصوبوں کے لئے3ارب86کروڑ30لاکھ روپے جبکہ28نئے منصوبوں کے لئے ایک ارب66کروڑ50لاکھ روپے رکھے گئے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/06/2015 - 22:41:52 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان