سندھ حکومت رواں مالی سال کے دوران پراپرٹی ٹیکس، پروفیشنل ٹیکس، غیرمنقولہ جائیداد ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر جون

مزید تجارتی خبریں

وقت اشاعت: 15/06/2015 - 16:32:03 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 16:32:02 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 16:24:52 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 16:23:23 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 16:21:35 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 16:21:35 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 16:20:09 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 16:17:20 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 16:13:54 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 16:13:53 وقت اشاعت: 15/06/2015 - 16:13:53
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

سندھ حکومت رواں مالی سال کے دوران پراپرٹی ٹیکس، پروفیشنل ٹیکس، غیرمنقولہ جائیداد پر گین ٹیکس، اسٹامپ ڈیوٹی، موٹروہیکل ٹیکس، کاٹن فیس کے اہداف حاصل نہ کرسکی

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 15 جون۔2015ء)سندھ حکومت مالی سال2014-15 کے دوران پراپرٹی ٹیکس، پروفیشنل ٹیکس، غیرمنقولہ جائیداد پر گین ٹیکس، اسٹامپ ڈیوٹی، موٹروہیکل ٹیکس، کاٹن فیس کے اہداف حاصل نہ کرسکی جبکہ الیکٹرسٹی ڈیوٹی کی مد میں غیر معمولی اضافہ رہا۔سندھ حکومت نے آئندہ مالی سال صوبائی ٹیکسوں کے ذریعے 124ارب 62کروڑ روپے وصول کرنے کاہدف مقرر کیاہے جس میں 8فیصد براہ راست جبکہ 92فیصد بالواسطہ ٹیکس شامل ہیں۔

آئندہ مالی سال کیلیے براہ راست ٹیکسوں کاہدف 9 ارب 95کروڑ 50لاکھ روپے مقررکیا گیاہے جن میں 65لاکھ روپے زرعی آمدن، 4ارب 44کروڑ 50لاکھ روپے پراپرٹی ٹیکس، 65لاکھ روپے لینڈریونیو، 41کروڑ روپے پروفیشنل ٹیکس، 3ارب 80کروڑ روپے غیرمنقولہ جائیداد پر کیپیٹل گین ٹیکس کے ذریعے وصول کیے جائیں گے۔ بالواسطہ ٹیکسوں کے لیے 81ارب روپے کاہدف مقررکیا گیا ہے جبکہ متفرق بالواسطہ ٹیکسوں کے ذریعے 33ارب 66کروڑ 50لاکھ روپے وصول کیے جائیں گے۔

براہ راست ٹیکسوں میں خدمات پرجی ایس ٹی کے ذریعے 61ارب روپے، ایکسائزکے ذریعے 4ارب 80کروڑ روپے، اسٹامپ ڈیوٹی کی مدمیں 9ارب 50کروڑ روپے، موٹروہیکل ٹیکس کی مدمیں 5ارب 70کروڑ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/06/2015 - 16:21:35 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان