بھارتی حکومت نے پاکستان اور افغانستان سے آنے والے 4 ہزار 300 ہندووٴں اور سکھوں کو ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر جون

بھارتی حکومت نے پاکستان اور افغانستان سے آنے والے 4 ہزار 300 ہندووٴں اور سکھوں کو انڈین شہریت دیدی

نئی دہلی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 15 جون۔2015ء)بھارت کی حکومت نے پڑوسی ممالک سے آئے ہوئے 2 لاکھ کے قریب پناہ گزینوں کو بھارتی شہریت دینے کے فیصلے کے پہلے قدم کے طور پر پاکستان اور افغانستان سے آنے والے تقریباً 4 ہزار 300 ہندووٴں اور سکھوں کو انڈین شہریت دیدی ہے۔ذرائع کے مطابق سابقہ بھارتی حکومت کے دور میں یہ تعداد 1 ہزار 23 تھی۔ پناہ گزینوں کو شہریت دینے کا سلسلہ ہوم منسٹر راجناتھ سنگھ کے حکم پر کیا گیا ہے، جنھوں نے حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی پالیسی پرعمل کرتے ہوئے یہ حکم جاری کیا۔

بی جے پی کی پالیسی کے مطابق بھارت ‘ ہندووٴں کا قدرتی گھر ہے اور پناہ لینے کیلئے یہاں ان کا استقبال کیا جائیگا۔اپنی الیکشن مہم کے دوران بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی نے اعلان کیا تھا کہ پاکستانی اور بنگلہ دیشی ہندو پناہ گزینوں کے ساتھ بھارتی شہریوں کی طرح سے سلوک کیا جائے گا۔واضح رہے کہ بھارت میں اس وقت پاکستان، بنگلہ دیش

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/06/2015 - 12:34:13 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان