کراچی سانحہ، پولیس پر حملے میں ملوث چار ملزموں کی شناخت ہوگئی
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
اتوار جون

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 14/06/2015 - 17:09:28 وقت اشاعت: 14/06/2015 - 17:08:26 وقت اشاعت: 14/06/2015 - 17:08:26 وقت اشاعت: 14/06/2015 - 17:08:26 وقت اشاعت: 14/06/2015 - 17:07:22 وقت اشاعت: 14/06/2015 - 17:07:22 وقت اشاعت: 14/06/2015 - 17:07:22 وقت اشاعت: 14/06/2015 - 17:06:07 وقت اشاعت: 14/06/2015 - 17:06:07 وقت اشاعت: 14/06/2015 - 17:06:07 وقت اشاعت: 14/06/2015 - 17:04:55
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

کراچی سانحہ، پولیس پر حملے میں ملوث چار ملزموں کی شناخت ہوگئی

پولیس پر حملہ کرنیوالوں میں گروپ کمانڈر ارشاد اللہ وزیر اور داؤد محسود ہیں ، افغانستان سے آپریٹ کیا جاتا ہے،رپورٹ

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔14جون۔2015ء)کراچی میں پولیس افسران و اہلکاروں کے قتل میں ملوث دہشت گردوں کی نشاندہی ہوگئی ہے ، دہشت گرد گروپ کے کمانڈر ارشاد اللہ اور داؤد محسود ہیں ، گروپ کو افغانستان سے آپریٹ کیا جاتا ہے ۔ کراچی میں پولیس افسران و اہلکاروں کی ٹارگٹ کلنگ میں ملوث دہشت گرد گروہ کی نشاندہی ہوگئی ہے ۔ تفتیشی ذرائع کے مطابق گروپ کے کمانڈر ارشاد اللہ وزیر اور داؤد محسود ہیں ، گروپ15 سے20 دہشت گردوں پر مشتمل ہے ، گروپ افغانستان سے آپریٹ کرتا ہے جبکہ گروپ کے کارندے وزیرستان میں بھی موجود ہیں ۔

تفتیشی ذرائع کے مطابق ایس پی اعجاز حیدر ، ڈی ایس پی عبدالفتح سانگری ، ڈی ایس پی مجید عباس اور ڈی ایس پی ذوالفقار زیدی کے قتل کا طریقہ واردات اور استعمال اسلحہ مماثلت رکھتا ہے اور ان پولیس افسران کے قتل میں بھی ارشاد اور داؤد گروپ کے ملوث ہونے کے شواہد ملے ہیں ۔ دہشت گرد داؤد محسود سابق پولیس اہلکار اور ایسٹ زون میں سیکورٹی کے فرائض انجام دے چکا ہے ۔

14/06/2015 - 17:07:22 :وقت اشاعت