پاکستان اور ہنگری کے مابین باہمی تجارت کو فروغ دینے کیلئے عمدہ مواقع موجود ہیں‘ ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ جون

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 13/06/2015 - 18:23:31 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 18:21:54 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 18:19:42 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 18:18:17 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 18:18:17 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 18:15:23 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 18:03:58 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 18:02:19 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 18:02:19 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 18:02:19 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 18:00:24
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

پاکستان اور ہنگری کے مابین باہمی تجارت کو فروغ دینے کیلئے عمدہ مواقع موجود ہیں‘ محمد شکیل منیر

اسلام آباد ۔ 13 جون (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 13 جون۔2015ء) اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سنیئر نائب صدر محمد شکیل منیر اور نائب صدر محمد اشفاق حسین چھٹہ نے ہنگرین نیشنل ٹریڈنگ ہاؤس میں ہنگری کے تاجروں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور ہنگری کے مابین باہمی تجارت کو فروغ دینے کے لئے عمدہ مواقع موجود ہیں لہذا دونوں ممالک کو چاہیئے کہ وہ تجارتی وفود کا باکثرت تبادلہ کریں تاکہ باہمی مفادات کے شعبوں میں تعاون کو بڑھا کر ان سے استفادہ حاصل کیا جا سکے۔

انہوں نے کہا کہ ہنگری یورپ کے وسط میں واقع ہے جبکہ پاکستان بھی جنوبی، وسطی ایشیا اور مشرق وسطی سمیت دیگر ممالک تک رسائی کے لئے ایک بہتر گزرہ گاہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہنگری اور پاکستان کا بہتر محل وقوع دونوں ممالک کو کاروبار کے شاندار مواقع فراہم کرتا ہے لہذا دونوں ممالک کو چائیے کہ وہ خاص طور پر تجارتی اور اقتصادی شعبوں میں تعاون کو فروغ دیں تاکہ دو طرفہ تجارت کو مذید وسعت دی جا سکے۔

شکیل منیر اور محمد اشفاق حسین چھٹہ نے ہنگری کے تاجروں پاکستان کی معیشت کے مختلف شعبوں میں بیرونی سرمایہ کاروں کے لئے پائے جانے والے سرمایہ کاری کے مواقعوں سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہنگری کے سرمایہ کاروں کو چائیے کہ وہ پاکستان میں زراعت، انفارمیشن ٹیکنالوجی، آٹو موبائلز، ادویات، ہاوٴسنگ اور توانائی سمیت متعدد شعبوں میں سرمایہ کاری کرکے ان مواقعوں سے بھر پور فائدہ اٹھائیں۔

انہوں نے کہاکہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے لہذا ہنگری کو چائیے کہ وہ زرعی مصنوعات کو بہتر بنانے کے لئے پاکستان کو جدید ٹیکنالوجی ، بہتر معلومات اور اور ماہرین فراہم

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

13/06/2015 - 18:15:23 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان