موجودہ بجٹ ایف بی آر کی استعداد کار پر سوالیہ نشان
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ جون

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 13/06/2015 - 18:00:24 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 17:51:22 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 17:48:23 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 17:48:23 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 17:48:23 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 17:46:12 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 17:46:12 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 17:38:28 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 17:38:28 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 17:36:42 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 17:36:42
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:36 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:38 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:39 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 10:35:10 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 اسلام آباد کی مزید خبریں

موجودہ بجٹ ایف بی آر کی استعداد کار پر سوالیہ نشان

ایف بی آر کے سابق چیئرمین کی متعارف کردہ اصلاحات کے باوجود آج تک کوئی چیز تبدیل نہیں ہوئی ہے

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 13 جون۔2015ء) موجودہ بجٹ ایف بی آر کی استعداد کار اور صلاحیتوں پر سوالیہ نشان اور اس کا امتحان ہے ۔ میڈیا رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایف بی آر کے سابق چیئرمین ریاض ملک کی جانب سے متعارف کردہ اصلاحات کے باوجود آج تک کوئی چیز تبدیل نہیں ہوئی ہے ۔ موجودہ فنانس بل پر نظر ڈالیے تو ایسا دکھائی دیتا ہے کہ ایف بی آر نے اس کو بطور پالیسی بیان قبول کر لیا ہے اور ہر چیز پر ٹیکس لگانے پر رضامند ہے اور ٹیکنالوجی کے استعمال کے ذریعے ودھولڈنگ ٹیکس رجیم ( Regame) کو بڑھانے کا سوچا ہے میڈیا رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ نئے بجٹ میں بغیر کسی تبدیلی کے ٹیکسز کو 500 ارب روپے سے بڑھانے کی حکومتی حکمت عملی واضح ہے ۔

رپورٹس میں ایف بی آر کی ویب سائیٹ پر بجٹ اقدامات کا ذکر بھی کیا گیا ہے بجٹ اعداد و شمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ 238 ارب روپے میں سے ٹیکس مشینری کو 15 ارب روپے اکٹھے کرین کا ٹاسک دیا گیا ہے جو بجٹ اقدامات کے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

13/06/2015 - 17:46:12 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان