وزیراعلیٰ پنجاب کا 4 ہزار ہنرمند نوجوانوں کو 75، 75 ہزار روپے کے بلاسود قرضے دینے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ جون

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 13/06/2015 - 16:56:17 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 16:53:43 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 16:53:43 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 16:51:45 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 16:51:45 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 16:51:45 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 16:45:52 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 16:36:30 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 16:36:30 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 16:36:30 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 16:29:49
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

وزیراعلیٰ پنجاب کا 4 ہزار ہنرمند نوجوانوں کو 75، 75 ہزار روپے کے بلاسود قرضے دینے کا اعلان، 50 کروڑ روپے مختص

لاہور ( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 13 جون۔2015ء) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ پاکستان کی 60 فیصد آبادی نوجوانو ں پر مشتمل ہے، نوجوان ہمارا مستقبل ہیں، ملک و قوم کے مستقبل کو تابناک بنانا ہماری ذمہ داری ہے،پنجاب حکومت نے آئندہ 3 برس میں 20 لاکھ نوجوانوں کو مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق ہنرمند بنانے کا ہدف مقرر کیا ہے جسے ہر صورت میں پورا کیا جائے گا، عالمی بینک، ایشیائی ترقیاتی بینک اور دیگر مالیاتی ادارے نوجوانو ں کو ہنرمند بنانے کے پروگراموں میں تعاون کریں تو خوش آمدید کہیں گے، تاہم اگر وہ ساتھ نہ بھی دیں تو ہم پھر بھی پاکستان کے مستقبل کو سنوارنے کیلئے نوجوانوں کو مختلف ہنر سکھانے کیلئے اپنا پیٹ کاٹ کر وسائل دیں گے اور ضمن میں میں اربوں روپے دینے کیلئے تیار ہوں، وزیراعلیٰ نے 4 ہزار ہنرمند نوجوانوں کو 75، 75 ہزار روپے کے بلاسود قرضے دینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ یہ قرضے ”اخوت“ اور ٹیوٹا کے اشتراک سے فنی تربیت مکمل کرنے والے ہنرمند نوجوانوں میں تقسیم کئے جائیں گے جس کیلئے 50 کروڑ روپے رکھے گئے ہیں ، اس شاندار پروگرام کا مقصد تربیت مکمل کرنے والے ہنرمند نوجوانوں کیلئے باعزت روزگار کی فراہمی ہے،نوجوانوں کو فنی تربیت دے کر بااختیار بنانے کیلئے وسائل کی فراہمی سودمند سرمایہ کاری اور روشن مستقبل کی نوید ہے، نوجوانوں پر مشتمل 60 فیصد آبادی کو بااختیار بنائے بغیر ترقی کے اہداف حاصل نہیں کئے جاسکتے، ٹیوٹا فنی تعلیم کے فروغ اور مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق ہنرمند افرادی قوت تیار کرنے کے حوالے سے اہم کردار ادا کر رہا ہے، ادارے کی کاوشوں سے سکل ڈویلپمنٹ میں انقلاب برپا ہوگا۔

وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے ان خیالات کا اظہار لاہور انٹرنیشنل ایکسپو سنٹر میں ٹیکنیکل ایجوکیشن اینڈ ووکیشنل ٹریننگ اتھارٹی کے زیراہتمام 2 روزہ سکلزایکسپو اور جاب فئیر2015 کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صوبائی وزراء چوہدری محمد شفیق، راجہ اشفاق سرور، ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا، سیکرٹریز لیبر، انڈسٹریز، اطلاعات، چیف ایگزیکٹو آفیسر پنجاب سکلز ڈویلپمنٹ فنڈ، امریکہ اور چین کے قونصل جنرلز، چیئرمین ٹیوٹا عرفان قیصر شیخ اور طلبا و طالبات کی بڑی تعداد تقریب میں موجود تھی۔

وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے ٹیوٹا سکلز ایکسپو 2015 اور کیرئیر کونسلنگ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ٹیوٹا کے زیراہتمام سکلز ایکسپو کا انعقاد شاندر اقدام ہے اور یہ گزشتہ 7 برس میں اپنی نوعیت کا پہلا اور منفرد پروگرام ہے۔ میں نمائش کے انعقاد پر وزیر صنعت، چیئرمین ٹیوٹا، سیکرٹری صنعت، ٹیوٹا کے بورڈ آف گورنرز، ٹرینرز، ماسٹر ٹرینرز اور طلبا و طالبات کو دل کی اتھاہ گہرائیوں سے مبارکباد پیش کرتا ہوں۔

ٹیوٹا، پی وی ٹی سی اور سکل ڈویلپمنٹ کمپنی جیسے ادارے ہنرمند افرادی قوت کی تیاری میں موثر کردار ادا کر رہے ہیں او ران کے پروگرام پنجاب حکومت کے ویژن کے مکمل عکاس ہیں۔ پنجاب حکومت سکل ڈویلپمنٹ پر خصوصی توجہ دے رہی ہے۔یہ نمائش معیاری ہنرمند افرادی قوت کی تیاری میں ممدو معاون ثابت ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ عمارتوں پر رقوم خرچ کرنے کی بجائے طلبا و طالبات کو فنی تعلیم سے آراستہ کرنا ہی پنجاب حکومت کا ویژن ہے اور یہی پاکستان کو آگے لے جانے کا واحد راستہ ہے۔

زراعت، صنعت و حرفت اور دیگر شعبوں میں نوجوانوں کو مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق ہنرمند بنا کر پاکستان کا نام روشن کریں گے اور اس ضمن میں ٹیوٹا انتہائی موثر انداز میں کام کر رہا ہے اور پنجاب حکومت کے ویژن کو آگے بڑھا رہا ہے۔ پاکستان کے پیداواری ہدف کو حاصل کرنے اور پاکستان کے استحکام کیلئے معیاری تربیت کے ساتھ افرادی قوت کی تیاری انتہائی اہمیت کی حامل ہے۔

جتنی زیادہ معیاری ہندمند افرادی قوت تیار ہوگی اتنی زیادہ معیشت مستحکم ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں یہ تاثر رہا ہے کہ بڑی آبادی مسائل کو گھمبیر کر دیتی ہے اور ترقی کی شرح میں رکاوٹ پڑتی ہے، تاہم نوجوانوں پر مشتمل پاکستان کی 60 فیصد آبادی اگرچہ ایک چیلنج کی حیثیت رکھتی ہے اور ہمیں اس چیلنج کو مواقع میں بدلنا ہے۔ ہمیں اس چیلنج کو قبول کرکے آگے بڑھنا ہے اور یہ چیلنج قبول کریں گے تو پاکستان آگے بڑھے گا۔

نوجوان نسل کو فنی تربیتی پروگراموں کے ذریعے بااختیار بنائیں گے اور پاکستان کو ترقی و خوشحالی کی منزل سے ہمکنار کریں گے۔پاکستان کی تاریخ میں آج تک صنعتوں، زراعت اور معاشی ترقی کے دیگر شعبوں کا فنی تربیت کے اداروں سے کوئی مربوط رابطہ نہیں رہا اور تمام امور انفرادی طور پر سرانجام دیئے جاتے رہے ہیں جس کے باعث ہنرمند فورس کی مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق تیاری نہیں ہوسکی، لیکن اس ملک میں بہت زیادہ پوٹنیشل موجود ہے جس سے فوائد حاصل نہیں کئے جاسکے۔

اب پنجاب حکومت نے صنعت، زراعت اور معاشی ترقی کے دیگر شعبوں اور فنی تربیت کے اداروں کے درمیان مربوط رابطہ بحال کیا جس سے مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق ہنرمند افرادی قوت تیار کی جا رہی ہے جس سے ملک کی معیشت ترقی کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ تمام سٹیک ہولڈرز مل بیٹھ کر ایسا جامع اور مربوط پروگرام وضع کریں جس سے نوجوانوں کو معیاری ہنر سکھایا جاسکے اور اس مقصد کیلئے کروڑوں نہیں، اربوں روپے فنڈز بھی فراہم کرنے کیلئے تیار ہوں۔

ہمیں نوجوانوں کو بااختیار بنانے کے چیلنج کو قبول کرنا ہے اور انہیں معیاری روزگار کے مواقع فراہم کرکے بااختیار بنانا ہے،اگر ہم اس سمت سنجیدگی سے آگے بڑھتے رہے تو راستے کھلتے رہیں گے اور پاکستان اپنے پاؤں پر ضرور کھڑا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ملک کا مستقبل سنوارنے کیلئے اگر ہمیں اپنا پیٹ بھی کاٹنا پڑا تو ہم پیٹ کاٹیں گے اور نوجوانوں کو ہنرمند بنائیں گے۔

اس ضمن میں تمام سٹیک ہولڈرز کو اپنا فرض ادا کرنا پڑے گا۔ میری صنعتکاروں، کاروباری شخصیات، فنی تربیت کے اداروں، اساتذہ اور تمام سٹیک ہولڈرز سے اپیل ہے کہ وہ آگے آئیں اور پاکستان کے مستقبل کیلئے نوجوانوں کو مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق ایسے کورسز اور تربیت فراہم کریں جس کی نہ صرف بیرون ملک بلکہ مقامی سطح پر بھی مانگ ہو۔

اس ضمن میں ایک سیمینار کرانے کا بھی اہتمام کیا جائے تاکہ مستقبل کے حوالے سے ایک موثر پروگرام سامنے آ سکے۔

میں خود آپ کے ساتھ بیٹھنے کیلئے تیار ہوں۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ دہشت گردی و انتہاپسندی نے پاکستان کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ہے۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پوری قوم نے لازوال قربانیاں دی ہیں۔ پاک افواج، پولیس اور سکیورٹی ادارے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں جرأت اور بہادری کی نئی تاریخ رقم کر رہے ہیں۔ پاکستان اپنی بقا کی جنگ لڑ رہا ہے۔

انشاء اللہ دہشت گردی کو شکست دیں گے اور پاکستان کو امن کا گہوارہ بنائیں گے۔ دشمن پاکستان میں افراتفری اور عدم استحکام چاہتا ہے تاہم اس کی یہ سازش کسی صورت کامیاب نہیں ہوگی اور اتحاد کی قوت سے دشمن کو شکست دیں گے اور اس کے مذموم عزائم خاک میں ملائیں گے۔ دہشت گردی کے خاتمے کیلئے اگرچہ بندوق کی گولی ضروری ہے تاہم اس کے ساتھ سکل ڈویلپمنٹ، تعلیم، صحت، روزگار کی فراہمی اور غربت کے خاتمے کی گولیاں بھی ضروری ہیں۔

پنجاب حکومت نے اسی مقصد کے تحت نوجوانو ں کو ہنرمند بنانے کے بڑے پروگرام شروع کئے ہیں جس کے تحت اب تک لاکھوں نوجوانوں کو ہنرمند بنایا جا چکا ہے اور اگلے 3 برس میں 20 لاکھ نوجوانو ں کو ہنرمند بنا کر ملک و قوم کی تقدیر بدل دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ روڈ شوز کا انعقاد بھی اسی وقت کارگر ثابت ہو سکتا ہے جب ہم نوجوانو ں کو مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق فنون کی تربیت دیں، بصورت دیگر یہ صرف وسائل کا ضیاع ہوگا۔

موثر فنی تعلیم کے فروغ کی حکمت عملی اور نوجوانوں کی فنی تربیت کے بغیر روڈ شوز کا انعقاد بے معنی ہے۔ پہلے فنی تربیت کے فروغ کے اہداف پورے کئے جائیں اور پھر روڈ شوز کا انعقاد کیا جانا چاہیئے۔ وزیراعلیٰ نے عوام کے فلاحی منصوبوں پر مخالفین کی تنقید کو بے جا قرار دیتے ہوئے کہا کہ میٹرو بس منصوبے غریب اور عام آدمی کیلئے ہیں۔ اشرافیہ کیلئے کروڑوں روپے کی لاگت کی بلٹ پروف گاڑیاں منگوائی جائیں تو وہ ٹھیک ہے لیکن اگر عام آدمی کے فلاحی منصوبے پر وسائل خرچ کئے جائیں تو اس پر اعتراض کیا جاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ میٹرو بس سروس سے محنت کش، اساتذہ، وکلاء، بیوہ، یتیم اور عام آدمی مستفید ہو رہے ہیں۔ عام آدمی کیلئے منصوبے بنانا اگر گناہ ہے تو میں یہ گناہ سو بار کرنے کیلئے تیار ہوں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے وسائل کا رخ غریب عوام کی طرف موڑ دیا ہے۔”اخوت“ تنظیم کے ذریعے 11 لاکھ خاندانوں کو 11 ارب روپے کے بلاسود قرضے تقسیم کئے گئے ہیں اور ان قرضوں کی واپسی کی شرح 99 فیصد سے زائد ہے۔

صوبائی وزیر خزانہ ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب کو خوشحال بنانا اور ترقی کے ثمرات عام آدمی تک پہنچانا ہمارا مشن ہے جس کی تکمیل کیلئے ہرممکن کوشش کی جائے گی۔ پنجاب میں شرح نمو میں اضافے کیلئے ایک موثر حکمت عملی تشکیل دی گئی ہے جس کے تحت نجی سرمایہ کاری کو فروغ دیا جائے گا اور اگلے 3 برس میں 20 لاکھ نوجوانوں کو فنی تربیت دیں گے۔

صوبائی وزیر صنعت چوہدری محمد شفیق نے کہا کہ وزیراعلیٰ شہبازشریف نے ٹیوٹا کے زیراہتمام نمائش میں شرکت کرکے ہمارا حوصلہ بڑھایا ہے۔ ہمارا مقصد پاکستان اور پنجاب کے نوجوانوں کو ایسی فنی تربیت فراہم کرنا ہے جس سے وہ ملک و قوم کی خدمت کرسکیں اور اپنے لئے روزگار کما سکیں۔ صوبائی وزیر محنت راجہ اشفاق سرور نے کہا کہ نوجوان ہمارے ملک کا مستقبل ہیں اوروزیراعلیٰ شہبازشریف کی ترجیح نوجوانو ں کو بااختیار بنانا ہے۔

چیئرمین ٹیوٹا عرفان قیصر شیخ نے ٹیوٹا کے فنی تربیت کے پروگراموں پر روشنی ڈالتے ہوئے بتایا کہ صنعتوں کی ضروریات کے مطابق چھوٹے جدید کورسز کا آغاز کیا گیا ہے اور ہنرمند نوجوانوں کیلئے بیرون ممالک روزگار کی فراہمی کیلئے بہترین کمپنیوں سے بات چیت بھی کی جا رہی ہے۔ قبل ازیں وزیراعلیٰ شہبازشریف نے لاہور انٹرنیشنل ایکسپو سنٹر میں ٹیکنیکل ایجوکیشن اینڈ ووکیشنل ٹریننگ اتھارٹی کے زیراہتمام 2 روزہ سکلز نمائش اور جاب فئیر2015 کا افتتاح کیا۔

وزیراعلیٰ نے نمائش میں لگائے گئے مختلف سٹالز کا دورہ کیا اور سکلز ڈویلپمنٹ کے حوالے سے مختلف کمپنیوں و اداروں کی جانب سے لگائے گئے سٹالز پر نوجوانوں کی مہارت و تربیت کے ساتھ ان کی بنائی گئی اشیاء اور ہنر کی تعریف کی۔ وزیراعلیٰ نے فنی تربیت کورسز کرنے والے طلبا و طالبات سے ملاقات کی اور ان سے تربیتی کورسز کے بارے میں دریافت کیا۔

13/06/2015 - 16:51:45 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان