دارالحکومت کے ہسپتالوں میں انسانی جانوں کا ضیاع حکمرانوں کیلئے لمحہ فکریہ ہے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ جون

مزید کشمیر کی خبریں

وقت اشاعت: 13/06/2015 - 15:14:12 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 15:14:12 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 15:05:59 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 15:05:59 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 15:05:59 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 15:05:15 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 15:05:15 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 15:05:15 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 15:04:01 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 15:04:01 وقت اشاعت: 13/06/2015 - 15:04:01
پچھلی خبریں - مزید خبریں

دارالحکومت کے ہسپتالوں میں انسانی جانوں کا ضیاع حکمرانوں کیلئے لمحہ فکریہ ہے ‘ڈاکٹر وں کی عدم موجودگی سے اعجاز چوہان کئی گھنٹے تڑپ تڑپ کر جان کی بازی ہار گیا ‘ذمہ داران کیخلاف فوری کاروائی کرکے انہیں کیفر کردار تک پہنچایا جائے

مسلم لیگ (ن) کے رکن قانون ساز اسمبلی بیرسٹر افتخار علی گیلانی کی عوامی وفود سے بات چیت

مظفرآباد ( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 13 جون۔2015ء ) مسلم لیگ (ن) کے رکن قانون ساز اسمبلی بیرسٹر افتخار علی گیلانی نے کہا ہے کہ دارالحکومت کے ہسپتالوں میں انسانی جانوں کا ضیاع حکمرانوں کیلئے لمحہ فکریہ ہے ڈاکٹر وں کی عدم موجودگی کے باعث اعجاز چوہان کئی گھنٹے تڑپ تڑپ کر جان کی بازی ہار گیا ذمہ داران کیخلاف فوری کاروائی کرکے انہیں کیفر کردار تک پہنچایا جائے ‘دارالحکومت کے ہسپتالوں میں ا یمرجنسی صورتحال کا سامنا کرنے کی صلاحیت موجود نہیں ہے ہیلتھ پیکج میں مظفرآباد کو بری طرح نظرانداز کیا گیا ہے اور صرف ایک پوسٹ رکھی گئی ہے،جو کہ نا انصافی ہے،ریاست بھر کے ہسپتالوں میں عوام کو بنیادی سہولیات سے محروم رکھا جا رہا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے عوامی وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ان کا کہنا تھا کہ دارالحکومت کے ہسپتال سی ایم ایچ میں سٹی سکین ، ایکسرے مشین ، ایم آر آئی مشین نہیں چلائی جا رہی ہسپتالوں میں فرسٹ ایڈ پوسٹ کی طرح کام ہو رہا ہے ایک سو بیڈ کے ہسپتال میں دوسو سٹاف کی ضرورت ہوتی ہے جبکہ امبور ہسپتال میں 350بیڈ کے ہسپتال

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

13/06/2015 - 15:05:15 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان