بھارت پاکستان کو غیر مستحکم اورجنگ کی طرف دھکیلنا چاہتا ہے،فضل الرحمان
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جون

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 12/06/2015 - 17:01:06 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 17:01:06 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:59:34 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:59:34 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:59:34 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:58:06 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:58:06 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:51:50 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:51:50 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:51:50 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:48:53
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:36 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:38 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:39 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 10:35:10 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 اسلام آباد کی مزید خبریں

بھارت پاکستان کو غیر مستحکم اورجنگ کی طرف دھکیلنا چاہتا ہے،فضل الرحمان

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 12 جون۔2015ء) جے یو آئی (ف) کے مرکزی امیر مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ نریندر مودی کے بیان پر وزارت خارجہ بین الاقوامی سطح پر بھرپور آواز اٹھائے اور حکومت مودی حکومت کے جارحانہ اقدامات کا سنجیدگی سے نوٹس لے۔ 2 لاکھ فوج دہشتگردی کی آگ بجھانے میں جھونک دی لیکن آگ نہ بجھی بلکہ 2005ء سے آئی ڈی پیز دربدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں برما میں مسلمانوں کی نسل کشی پر دہشتگردی کے خلاف آواز بلند کرنے والے کہاں گئے یمن بحران حل کرنے کیلئے پاکستان دیگر ممالک سے ملکر بھرپور کردار ادا کرے 42 سال سے اسلامی نظریاتی کونسل سفارشات دے رہی ہے لیکن کوئی نظرثانی نہیں ہوئی ہے لیکن 21 ترمیم اور فوجی عدالتوں کیلئے فوراً قانون سازی ہو جاتی ہے 21ویں ترمیم میں مذہب کے خلاف بنائے گئے قوانین کو حکومت نے واپس لے لیا جس پر حکومت کے شکر گزار ہیں قومی وطن پارٹی کے سربراہ آفتاب شیرپاؤ نے کہا کہ آئین کے مطابق بجٹ ہونا چاہئے تھا فیڈریشن کی 4 اکائیوں کو انکے پورے حقوق دیئے جائیں۔

جمعہ کے روز سپیکر قومی اسمبلی کا اجلاس سپیکر ایاز صادق کی زیر صدارت 10 بجکر 10 منٹ پر شروع ہوا ۔بجٹ بحث میں حصہ لیتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ تقاریر میں آئین پر تنقید کا سلسلہ جاری ہے اراکین کی جانب سے بجٹ تقریر میں پیش کی جانے والی تجاویز کو حکومت سنجیدگی سے لے بجٹ کیلئے صرف اعداد و شمار کو پیش کرنا لازمی نہیں بلکہ تمام بنیادی چیزوں کو بھی مدنظر رکھا جاتا ہے پاکستان کو سنگین مشکلات کا سامنا ہے سیکیورتی چیلنج کے بعد اقتصادیات کو مستحکم کرنا مشکل کام ہوتا ہے۔

بھارت کا پاکستان کے خلاف رویے کو سنجیدگی سے دیکھنا ہو گا بھارت میں نئی حکومت کے آنے کے بعد جارہانہ اقدامات پر پاکستان کو سنجیدگی سے نوٹس لینا ہو گا نریندر مودی نے پاکستان توڑنے پر جو بنگلہ دیش میں بیان دیگر ایوارڈ حاصل کیا اور پھر اقتصادی راہداری پر ہندوستان کا رویہ اس بات کا اشارہ ہے کہ بھارت پاکستان کو غیر مستحکم اور جنگ کی طرف دھکیلنا چاہتا ہے لیکن پاکستان کوصبر و تحمل سے تمام پہلوؤں کو دیکھنا ہو گا ملک کی ترقی کیلئے قوم کو تحفظ دینا ہو گا 9/11 کے بعد پاکستان کو بچانے کیلئے ایک فوجی آمر نے امریکہ کیساتھ اتحادی ہونے کا نعرہ لگایا اور پھر امریکہ نے افغانستان میں جنگ شروع کی اور ہماری پالیسیاں تنزلی کا شکار ہو گئیں اور افغانستان کی آگ پاکستان میں آ گئی اور ہم نے 2 لاکھ فوج اس آگ میں جھونک دی لیکن پھر بھی وہ آگ بجھ نہیں رہی کشمیر متنازعہ ہے اور اقوام متحدہ کے مطابق کشمیریوں کو استصواب رائے کا حق دیا جائے لیکن انکو نہیں مل رہا ہندوستان کیساتھ کشمیر کا مسئلہ ہے جو کہ 38 ہزار مہاجرین بیٹھے ہوئے ہیں جب وہ 1990ء میں آئے آج بھی وہ انہی خیموں میں زندگی گزار رہے ہیں اور انکو کوئی نیا پیکج نہ دینے کی قسم اٹھائی ہے کشمیر کمیٹی نے 2 فروری کو حکومت سے معاہدہ کیا لیکن کوئی عملدرآمد نہیں ہوا مہاجرین کیلئے کوئی ہاؤسنگ سکیم نہیں بنائی گئی کشمیر کمیٹی کی جانب سے 4 ہزار روپے ہر خاندان کو ملتے تھے وہ بھی اب نہیں مل رہے انکا قبرستان بھی نہیں ہے کشمیریوں کی مشکلات کا سنجیدگی سے نوٹس لینا چاہئے ملک میں آئی ڈی پیز کا بڑا مسئلہ ہے 2005ء سے جنوبی وزیرستان کا قبیلہ اور وادی تیراہ کا قبیلہ آج تک گھروں کو واپس نہیں جا سکا خیبر پٹی کے قبائل اب پورے ملک میں پھیل گئے قبائل کے بچوں کی تعلیم متاثر ہو رہی ہے اور اب دہشتگردوں کو ختم کرنے کے دعویٰ ہو رہے تو انہیں دوبارہ گھروں کی واپسی کا عمل شروع کیا جائے اگر ان علاقوں میں اب امن ہے تو پھر قبائلیوں کو گھروں میں کیوں نہیں بھیجتے اس وقت پاکستان اقتصادی ترقی پر چل پڑا لیکن اگر ہم نے امریکہ اور دیگر ملکوں کی پالیسیوں پر عمل کیا تو پھر ہم ترقی نہیں کر سکتے کیونکہ امریکہ ہمیں غلام بنانا چاہتا ہے اقتصادی لحاظ سے ورلڈ بنک آئی ایم ایف ایشیئن بنک نے قرضوں میں ہمیں جکڑا ہوا ہے جب تک ہم اپنے وسائل استعمال نہیں کرینگے ملک ترقی نہیں کریگا۔

قرضوں کو ادا کرنے کیلئے پھر ٹیکس عائد کئے جاتے ہیں اصلاحات کے بغیر نظام کو ٹھیک کرنا ممکن نہیں ہے عدالتی سطح پر سودی نطام کے خاتمے کے فیصلے ہوئے امریکہ میں سود کے بغیر بینکاری شروع ہو گئی لیکن یہاں پر جاری ہے اور ہم سود سے بچنے کیلئے کوئی اقدامات نہیں کرتے چین کی اقتصادی راہداری کے منصوبے کو حکومت نے منطقی انجام تک پہنچایا حکومت کو مبارکباد دیتا ہوں چین نے ہمیں بھائیوں جیسا رویہ دیا خوش آمدید کہتے ہیں برما کے حالات پر ہر مسلمان کا دل دکھ میں مبتلا ہے لیکن ایک مظلوم مسلمان قوم پر ظلم کے خلاف وہ آواز نہیں اٹھائی گئی اور دہشتگردی کے خلاف جنگ کی آواز بلند کرنے والے کہاں گئے لیکن حقیقت میں یہ مسلمانوں کی نسل کشی ہے ہمارے وزارت خارجہ کو بھرپور بین القوامی سطح پر آواز اٹھانی چاہئے آج یمن کی صورتحال پر دوست سعودی حکومت پریشان ہے اور انکی نظریں ہماری طرف دیکھ رہی ہیں ہمیں انکی توقعات پر پورا اترنا چاہئے اور تمام تر ملکوں کو مل کر بحران کے حل کیلئے اہم ترین کردار ادا کرنا چاہئے اور بھارت کو بھی بھرپور جواب دیا جائے تجارت میں بہتری لانے کیلئے پیداواری چیزوں کو بڑھانا ہو گا 42 سال سے اسلامی نظریاتی کونسل کا ادارہ جو بھی اسلامی شریعت کیلئے سفارشات دیتا ہے ان پر کوئی نظرثانی نہیں ہوتی ہم فوجی عدالتیں اور 21 ویں رترمیم پر تو قانون سازی کرتے ہیں۔

21 ویں ترمیم میں مذہب کے خلاف بنائے گئے قوانین کو حکومت نے واپس لیا اس پر حکومت کے شکر گزار ہیں اور پھر ان میں دینی مدارس کو دہشتگردی سے تشبیہ دیتے ہیں دعا گو ہوں کہ پارلیمنٹ میں قانون سازی ہو دہشتگردی کے خلاف ہم سب ایک پیج پر ہیں لیکن ہر بات کو بھی نہیں مانیں گے اختلاف رائے جمہوریت کا حسن ہے بعد ازاں اسپیکر نے ایوان زریں کا اجلاس جمعہ نماز کیلئے 2 بجے تک موخر کر دیا۔

آفتاب احمد شیرپاؤ نے کہا کہ حکومت کا تیسرا بجٹ پیش کیا لیکن ایوان میں ارکان کی تعداد ون تھرڈ بھی نہیں ہے ہمیں آئین کے مطابق بجٹ بنانا چاہئے اور آئین میں این ایف سی ایوارڈ کیلئے 5 سال ہیں جو جون میں ختم ہو جائے گی لیکن فنانس کمیتی نے بجٹ کے حوالے سے ہم سے کوئی تجاویز بھی نہیں لی۔ وزیر خزانہ نے جو بجٹ پیش کیا

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

12/06/2015 - 16:58:06 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان