اظہار رائے کی آزادی کا مطلب یہ نہیں کہ کسی کو بھی لائسنس دیدیا جائے ‘چیئر مین ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جون

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:08:19 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:03:50 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:03:50 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:03:50 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:00:58 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:00:58 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 16:00:58 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 15:57:18 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 15:57:18 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 15:57:18 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 15:54:38
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

اظہار رائے کی آزادی کا مطلب یہ نہیں کہ کسی کو بھی لائسنس دیدیا جائے ‘چیئر مین سینٹ

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 12 جون۔2015ء) چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی نے کہاہے کہ اظہار رائے کی آزادی کا مطلب یہ نہیں کہ کسی کو بھی لائسنس دیدیا جائے، گزشتہ دنوں سے آج تک آئین ، پارلیمان اور جمہوری نظام کو ٹارگٹ بنایا جارہاہے ‘ پارلیمان اس معاملے کو سنجیدہ نہیں لے رہی ‘ اس شخص کا بیان جمہوری عمل کو ایک بار پھر ڈی ریل کرنے کی دعوت ہے، یہ صریحا آئین کی خلاف ورزی ہے جبکہ اراکین سینیٹ نے جنرل ریٹائرڈ حمید گل کے بیان پر ان کیخلاف آرٹیکل 6 کے تحت مقدمہ چلانے کا مطالبہ کیا ہے اور بعض اراکین نے موقف اختیار کیا کہ ان کے بیان کو اتنی اہمیت نہ دی جائے ۔

جمعہ کو سینیٹ کے اجلاس میں سینیٹر عثمان اللہ کاکڑ نے کہا کہ جنرل ریٹائرڈ حمید گل کا انٹرویو شائع ہواہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ ’آئین کو منسوخ کر کے فوج اقتدار سنبھال لے، قرارداد مقاصد کے ہوتے ہوئے سیاسی جماعتوں کی ضرورت نہیں ہے‘۔ سینیٹر عثمان اللہ کاکڑ نے کہا کہ جنرل حمید گل کا ماضی اس ملک کے سب جرنیل اور عوام کو معلوم ہے ، حمید گل دہشت گردی کے حوالے سے سب سے زیادہ ذمہ دار ہیں، بنیادی طور پر وہ دہشت گردوں کے سرپرست ہیں، افسوس ہے کہ ایک طرف ضرب عضب چل رہا ہے، دوسری طرف نیشنل ایکشن پلان موجود ہے، اس کے باوجود یہ شخص کسی زد میں نہیں آرہا۔

اس کو نہ ہی کسی عدالت نے طلب کیا اور نہ ہی اس کا بیان آئین اور قانون کی پامالی کے زمرے میں آیا۔

انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ متفقہ طور پر مطالبہ کرے کہ حمید گل کیخلاف آرٹیکل 6 کے تحت مقدمہ درج کیا جائے، میڈیا بھی اس کو پرموٹ کررہا ہے ،خاص حالات میں اس شخص کو سامنے لاتا ہے، اس موقع پر چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی نے کہا کہ اس شخص کو قرارداد کے ذریعے اہمیت نہیں دینی چاہئے۔

ایوان اس بات کا خود نوٹس ضرور لے۔ آئین کے تحت اظہار رائے کا مطلب یہ نہیں کہ کسی کو لائسنس مل جائے،

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

12/06/2015 - 16:00:58 :وقت اشاعت