وزیراعظم نریندرا مودی کے سنیئر ساتھی میانمار میں متنازع فوجی کارروائی پر جارحانہ ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جون

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 12/06/2015 - 14:19:41 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 14:17:45 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 14:17:45 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 14:17:45 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 14:16:28 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 14:16:28 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 14:16:28 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 14:12:00 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:43:57 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:20:42 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:16:24
پچھلی خبریں - مزید خبریں

وزیراعظم نریندرا مودی کے سنیئر ساتھی میانمار میں متنازع فوجی کارروائی پر جارحانہ بیانات دے رہے ہیں ‘ بھارتی اپوزیشن

اپوزیشن پاکستان کی زبان بول رہی ہے ‘ بھارتیہ جنتا پارٹی , بھارتی وزیر دفاع غیر ذمہ دارانہ بیانات دینے کی عادت کا شکار ہیں ‘ کانگریس کے ترجمان کا رد عمل

نئی دہلی (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 12 جون۔2015ء)بھارت کی اپوزیشن جماعت کانگریس پارٹی نے کہا ہے کہ وزیراعظم نریندرا مودی کے سنیئر ساتھی میانمار میں متنازع فوجی کارروائی پر جارحانہ بیانات دے رہے ہیں جبکہ بھارتی حکومتی جماعت کے ترجمان نے کہا ہے کہ اپوزیشن پاکستان کی زبان بول رہی ہے ۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق دونوں جماعتوں کے درمیان بیانات کا یہ تبادلہ نریندر مودی کے ساتھیوں کی جانب سے شمال مشرقی ریاست منی پور کے علیحدگی پسندوں کے خلاف بھارتی فوج کی کارروائی پر تبصروں کے بعد ہوا۔

پریس ٹرسٹ آف انڈیا کے مطابق بی جے پی نے اپوزیشن جماعت کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ کانگریس تعمیری اپوزیشن کا کردار ادا کرنے کی بجائے پاکستان کی زبان بول رہی ہے۔کانگریس کے ترجمان آنند شرما نے وزیر دفاع منوہر پاریکر کے تند و تیز بیان کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا تھا کہ وہ غیر ذمہ دارانہ بیانات دینے کی عادت کا شکار ہیں۔آنند شرما کا یہ بیان وزیر دفاع کے ایک روز پہلے کے بیان کے بعد سامنا آیا جس میں منوہر پاریکر نے میانمار آپریشن کو ذہن کی تبدیلی قرار دیا تھا جو بظاہر ان کی جانب سے پاکستان کے لیے اشارہ تھا۔

کانگریس ترجمان نے اپنے بیان میں کہا کہ سنجیدگی اور باشعور سوچ کا مظاہرہ کیا جانا چاہئے، جارحانہ اور پرغرور دعوے انڈین اسپیشل فورسز کے آپریشنز میں مددگار ثابت

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

12/06/2015 - 14:16:28 :وقت اشاعت