انتظامیہ نے مسلمانوں کو نئے گھر الاٹ کئے لیکن ہندوؤں کی مخالفت کے بعد ان کی الاٹمنٹ ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جون

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:16:09 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:16:09 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:16:09 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:14:58 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:10:56 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:10:56 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:10:56 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:09:29 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:09:29 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:09:29 وقت اشاعت: 12/06/2015 - 13:08:06
پچھلی خبریں - مزید خبریں

گجرات

گجرات شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

انتظامیہ نے مسلمانوں کو نئے گھر الاٹ کئے لیکن ہندوؤں کی مخالفت کے بعد ان کی الاٹمنٹ بھی منسوخ کر دی

گجرات (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 12 جون۔2015ء )بھارتی ریاست گجرات میں انتظامیہ نے مسلمانوں کی بستی گرا کر نئے گھر الاٹ کیے تاہم ہندووٴں کی مخالفت پر الاٹمنٹ منسوخ کر دی گئی ۔ بھارتی ریاست گجرات کے بڑودہ شہر میں 8 ماہ پہلے انتظامیہ نے ترقیاتی منصوبے کے تحت 2000 سے زائد مسلمانوں کے مکانوں پر مشتمل کلیان نگر بستی منہدم کر دی تھی اور قانون کے تحت مسلمانوں کو شہر میں متبادل مکان الاٹ کیے گئے ، تاہم انتہاپسند ہندووٴں کی مخالفت کے سبب میونسپلٹی نے الاٹمنٹ منسوخ بھی کر دی

12/06/2015 - 13:10:56 :وقت اشاعت