ایران ، ہاشمی رفسنجانی کی خامنہ ای سے تلخ کلامی بدلہ بیٹے کو دینا پڑ گیا
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جون

ایران ، ہاشمی رفسنجانی کی خامنہ ای سے تلخ کلامی بدلہ بیٹے کو دینا پڑ گیا

تہران (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 12 جون۔2015ء) گارڈین کونسل کے چیئرمین اور سابق صدر علی اکبر ہاشمی رفسنجانی اور سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کے مابین بالواسطہ طور پر بعض امور پر ایک دوسرے سے تلخ کلامی ہونے کے بعد ایرانی عدالت نے علی اکبر ہاشمی رفسنجا نی کے بیٹے مہدی رفسنجانی کو 10 سال کے لئے جیل بھیج دیا گیا میڈیا رپورٹس کے مطابق اس تلخ نوائی کے چند ہی روز بعد رفسنجانی کو اس کا خمیازہ بیٹے مہدی ہاشمی کی 10 سال کے لیے قید کی خبر کی صورت میں بھگتا پڑا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ایرانی جوڈیشل کونسل کے ترجمان حج الاسلام غلام حسین محسنی ایجی کا کہنا ہے کہ سابق صدر علی اکبر ہاشمی رفسنجانی کے صاحبزادے مہدی رفسنجانی کو کرپشن الزامات کے تحت دس سال کے لیے جیل بھیج دیا گیا ہے نیز مہدی ہاشمی کو دی گئی سزا کی اپیل کورٹ کی جانب سے بھی توثیق کی گئی ہے۔خیال رہے کہ مہدی ہاشمی رفسنجانی پر کرپشن، رشوت خوری اور کئی دوسرے الزامات کے تحت عدالت میں مقدمہ چل رہا تھا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق علی خامنہ ای اور گارڈین کونسل کے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

12/06/2015 - 12:04:21 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان