جرمن پارلیمان کے کمپیوٹرنظام ابھی بھی سائبر حملے کی زد میں ہیں
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات جون

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 11/06/2015 - 18:39:36 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 18:39:36 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 18:37:53 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 18:37:53 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 18:35:34 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 18:35:34 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 18:35:34 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 18:34:05 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 18:18:29 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 18:00:01 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 17:40:19
پچھلی خبریں - مزید خبریں

جرمن پارلیمان کے کمپیوٹرنظام ابھی بھی سائبر حملے کی زد میں ہیں

برلن۔ 11 جون (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 11 جون۔2015ء) جرمن پارلیمان کے کمپیوٹرنظام ابھی بھی سائبر حملے کی زد میں ہے۔جریدے ڈیئر اشپیگل نے اپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے کہ پارلیمان کے کمپیوٹرز پر سائبر حملے کو چار ہفتے گزر چکے ہیں اور ابھی بھی اعداد و شمار اور دستاویزات کی کسی نامعلوم مقام کی جانب منتقلی جاری ہے۔ ابھی تک یہ واضح نہیں ہے کہ اس ہیکنگ کے پیچھے کس کا ہاتھ ہے۔رپورٹ کے مطابق اس سائبر حملے میں اندازوں سے کہیں زیادہ نقصان ہوا ہے۔ مواصلات کے شعبے کی حفاظت پر مامور محکمے نے بھی کمپیوٹرز کو فوری طور پر تبدیل کرنے کی تجویز دی ہے۔

11/06/2015 - 18:35:34 :وقت اشاعت