ہزارہ یونیورسٹی میں انتظامیہ اور طلبہ گروپوں میں مسلح تصادم ، دستی بموں سے حملے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات جون

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 11/06/2015 - 17:37:57 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 17:36:06 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 17:36:06 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 17:36:06 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 17:33:56 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 17:33:56 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 17:28:11 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 17:14:54 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 17:14:54 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 17:01:25 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 16:56:36
پچھلی خبریں - مزید خبریں

مانسہرہ

ہزارہ یونیورسٹی میں انتظامیہ اور طلبہ گروپوں میں مسلح تصادم ، دستی بموں سے حملے اور فائرنگ سے 15 سے زائد طلبہ زخمی

پولیس نے یونیورسٹی کو سیل کر کے سرچ آپریشن شروع کر دیا متعدد مسلح طلبہ گرفتا ر

مانسہرہ (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 11 جون۔2015ء) ہزارہ یونیورسٹی میں انتظامیہ اور دو طلبہ گروپوں میں مسلح تصادم ، ایک دوسرے پر دستی بموں سے حملے اور شدید فائرنگ سے 15 سے زائد طلبہ زخمی ہو گئے ہیں پولیس نے یونیورسٹی کو سیل کر کے سرچ آپریشن شروع کر دیا اور متعدد مسلح طلبہ کو حراست میں لے لیا ہے ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق جمعرات کے روز پختون طلبہ گروپ کے ایک طالب علم کا یونیورسٹی کے ایک سیکیورٹی گارڈ سے معمولی بات پر جھگڑا ہوا جس کے بعد طلبہ گروپ نے یونیورسٹی انتظامیہ کے خلاف شدید احتجاج کیا اور نعرے بازی کی گئی ۔

احتجاج کے دوران بعض مشتعل طلبہ کی جانب سے شدید ہوائی فائرنگ کی گئی جس پر یونیورسٹی میں موجود ایک اور مخالف گروہ ہزارہ طلبہ گروپ کے مسلح نوجوان پختون مسلح نوجوانوں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/06/2015 - 17:33:56 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان