سرسوں اور کینولا کی نئی اقسام کی تیاری سے درآمدی بیجوں کی شرح کم ہو گئی
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات جون

مزید تجارتی خبریں

وقت اشاعت: 11/06/2015 - 15:00:50 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 14:58:56 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 14:58:55 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 14:57:20 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 14:24:28 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 14:21:54 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 14:21:52 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 14:20:57 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 14:18:26 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 14:18:25 وقت اشاعت: 11/06/2015 - 13:17:53
پچھلی خبریں - مزید خبریں

فیصل آباد

سرسوں اور کینولا کی نئی اقسام کی تیاری سے درآمدی بیجوں کی شرح کم ہو گئی

فیصل آباد ۔11 جون (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 11 جون۔2015ء) سرسوں اور کینولا کی نئی اقسام کی تیاری سے 134 کروڑ روپے کے درآمدی بیج کی شرح کم ہو کر صرف 31کروڑ روپے رہ گئی ہے جبکہ نئی اقسام کی کاشت سے پاکستان دنیابھر میں کینو پیداکرنے والا تیسرا ، کپاس کا چوتھا ، گندم کا پانچواں ، کماد کا آٹھواں اور دھان پیداکرنے والا 13واں بڑاملک بن گیاہے نیز رواں سال پنجاب سے گندم کی 19.5 ملین ٹن ریکارڈ پیداوار بھی حاصل ہوئی ہے جن میں ایوب ریسرچ کی دریافت کردہ اقسام کا بھی بڑا عمل دخل ہے ۔

ایوب زرعی تحقیقاتی ادارہ فیصل آبادکے ترجمان نے بتایاکہ گندم کے سالانہ پیداواری مقابلہ میں ایوب ریسرچ کی تیار کردہ گندم کی قسم سحر 2006 کی کاشت سے 98.78من فی ایکڑ پیداوار حاصل کی جو ایک ریکارڈ ہے۔ انہوں نے بتایاکہ اس

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/06/2015 - 14:21:54 :وقت اشاعت