بنوں،سانحہ پشاور کے شہداء اور پاک فوج سے اظہار یکجہتی کیلئے مختلف مزدور یونین، ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ دسمبر

مزید مقامی خبریں

وقت اشاعت: 24/12/2014 - 20:52:29 وقت اشاعت: 24/12/2014 - 20:51:19 وقت اشاعت: 24/12/2014 - 20:49:53 وقت اشاعت: 24/12/2014 - 20:46:44 وقت اشاعت: 24/12/2014 - 20:46:44 وقت اشاعت: 24/12/2014 - 20:40:25 وقت اشاعت: 24/12/2014 - 20:38:55 وقت اشاعت: 24/12/2014 - 20:19:51 وقت اشاعت: 24/12/2014 - 20:12:12 وقت اشاعت: 24/12/2014 - 20:04:58 وقت اشاعت: 24/12/2014 - 19:51:19
پچھلی خبریں - مزید خبریں

بنوں

بنوں شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

بنوں،سانحہ پشاور کے شہداء اور پاک فوج سے اظہار یکجہتی کیلئے مختلف مزدور یونین، تاجر برادری اور ٹرانسپورٹ یونینوں کی ریلی

بنوں(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔24دسمبر 2014ء)سانحہ پشاور کے شہداء اور پاک فوج سے اظہار یکجہتی کیلئے چیف وارڈن سول ڈیفنس نعمت علی ایڈوکیٹ کی قیادت میں ضلع بنوں کے مختلف مزدوریونین،تاجر برادری اور ٹرانسپورٹ یونینوں نے ریلی نکالی ریلی کے شرکاء نے ہاتھوں میں دیو قامت پوسٹرز اور پینا فلیکس اٹھارکھے تھے جن پر شہداء اور پاک فوج کے حق میں جبکہ دہشت گردی کے خلاف نعرے درج تھے ریلی سینکڑوں رہنماؤں کے علاوہ سکولوں کے بچوں نے بھی کثیر تعداد میں شرکت کی ریلی مختلف بازاروں سے ہوتی ہوئی پریس کلب بنوں پہنچی جہاں ریلی کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے چیف وارڈن سول ڈیفنس نعمت علی ایڈوکیٹ،مرکزی انجمن تاجران کے صدر ملک سلیم الرحمن،ہیوی ٹرانسپورٹ یونین کے صدر ملک نیک دراز خان منڈان،عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے بانی امیر حافظ مولانا عبدالستار شاہ بخاری،چیمبر آف کامرس کے صدر شاہ وزیر خان،انجمن تاجران شاپ کیپر یونین نیو جنرل بس سٹینڈ کے صدر حاجی گل پیر،انجمن تاجران کے ضلعی جنرل سیکرٹری غلام قیباز خان،،آل بنوں ڈسٹرکٹ مزدور یونین کے صدر حاجی محمد اسماعیل خان اور دیگر رہنماؤں نے سانحہ پشاور کو دنیا کی تاریخ کا ظلم عظیم قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم نے ہمیشہ قبروں پہ پھول چڑھائے ہیں آج تاریخ میں پہلی مرتبہ پھولوں کو قبروں میں دفن کیا ہے دہشت گردوں نے آرمی پبلک سکول پشاور میں خون کی ہولی کھیل کر ہر آنکھ کو آشکبار اور ہر دل کو چھلنی کردیا ہے جسکی ہم بھرپور مذمت کرتے ہیں اور مطالبہ کرتے ہیں کہ جن لوگوں کو پھانسی کی سزائیں ہوئی ہیں انہیں بلاتاخیر پھانسی پر چڑھادیں اور نہ صرف پھانسی دیں بلکہ بیچ چوراہوں اور چوکوں پر عوام کے سامنے لٹکایاجائے تاکہ عوام کے دلوں سے ان کے خوف کو ختم کیا جاسکے کیونکہ جو جہاد پر یقین نہیں رکھتا اس کا ایمان نامکمل ہے لیکن یہ کیسا جہاد ہے کہ بچوں،اساتذہ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

24/12/2014 - 20:40:25 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان