حکومت کی رٹ ہوتی تو سانحہ مستونگ پیش نہ آتا ،سردار اختر جان مینگل ، زائرین کو سیکورٹی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات جنوری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 23/01/2014 - 19:01:52 وقت اشاعت: 23/01/2014 - 19:00:04 وقت اشاعت: 23/01/2014 - 18:59:20 وقت اشاعت: 23/01/2014 - 18:59:20 وقت اشاعت: 23/01/2014 - 18:58:50 وقت اشاعت: 23/01/2014 - 18:58:20 وقت اشاعت: 23/01/2014 - 18:58:20 وقت اشاعت: 23/01/2014 - 18:58:20 وقت اشاعت: 23/01/2014 - 18:56:48 وقت اشاعت: 23/01/2014 - 18:56:48 وقت اشاعت: 23/01/2014 - 18:56:48
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کوئٹہ

حکومت کی رٹ ہوتی تو سانحہ مستونگ پیش نہ آتا ،سردار اختر جان مینگل ، زائرین کو سیکورٹی فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے،تمام معاملات جمہوری انداز میں حل کرنا چاہتے ہیں، نجی ٹی وی سے بات چیت

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔23 جنوری ۔2014ء)بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر سابق وزیر اعلیٰ رکن صوبائی اسمبلی سردار اختر جان مینگل نے کہا ہے کہ اگر صوبے میں حکومت کی رٹ ہوتی تو سانحہ مستونگ پیش نہ آتا اور اتنی قیمتی جانیں ضائع نہ ہوتی زائرین کو سیکورٹی فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے حکومت جتنی سیکورٹی اپنے وزراء پر لگاتی ہے اگر اتنی سیکورٹی زائرین کی بسوں پر لگائیں تو اس طرح کے المناک واقعات نہ ہوتے ۔

انہوں نے یہ بات جمعرات کے روز نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے کہی انہوں نے کہاکہ حکومت کو پہلے سوچنا چاہیے کہ سیکورٹی کہاں کہاں ضرورت ہے پہلے ان کو ڈالر جمع کرنے کا شوق ہے جب ڈالر جمع ہوتے ہیں تو پھر یہ تمام ذمہ داریوں سے سکبدوش ہوجاتے ہیں اور انہیں کچھ معلوم نہیں ہوتا کہ عوام کیلئے کیا کرنا ہے اور کیا نہیں کرنا ہے مغربی ممالک کو خوش کرکے ڈالر جمع کرتے ہیں اور ریڈ کارپٹ کے ذریعے اپنے آقاؤں کو رخصت کرتے ہیں صوبے میں امن وامان کی ذمہ داری حکومت پر عائد ہوتی ہے انہوں نے کہاکہ ہمارے حکمرانوں کا یہ حال ہے کہ وہ اپنے آقاؤں کو پہلے ریڈ کارپٹ کے ذریعے رخصت کرتے ہیں اور اگر کبھی ضرورت پڑے تو کئی قبروں پر جاکر فاتحہ بھی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

23/01/2014 - 18:58:20 :وقت اشاعت