پی ایف یو جے کی کال پرملک بھر میں آزادکشمیر، گلگت بلتستان سمیت تمام چھوٹے بڑے شہروں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر جنوری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 20/01/2014 - 21:56:49 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 21:36:58 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 21:36:58 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 21:36:58 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 21:33:35 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 21:31:06 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 21:29:42 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 21:29:42 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 21:29:42 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 21:29:07 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 21:29:07
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

پی ایف یو جے کی کال پرملک بھر میں آزادکشمیر، گلگت بلتستان سمیت تمام چھوٹے بڑے شہروں میں احتجاجی مظاہرے کئے گئے

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔20 جنوری ۔2014ء)پی ایف یو جے کے صدر، قائد صحافت افضل بٹ کی کال پر ملک بھر کے پریس کلبوں پر سیاہ پرچم لہرا دیئے گئے اور وفاقی دارالحکومت کے علاوہ چاروں صوبائی دارالحکومتوں سمیت آزادکشمیر، گلگت بلتستان اور مختلف چھوٹے بڑے شہروں میں صحافیوں نے شان ڈاہر اور ایکسپریس کے کارکنوں کی شہادت کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔

اسلام آباد میں پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے احتجاجی مظاہرے کی قیادت صدر پی ایف یو جے افضل بٹ، صدر آر آئی یو جے علی رضا علوی، صدر نیشنل پریس کلب شہریارخان، حامد میر، سمیع ابراہیم، ابصار عالم، قربان ستی، بلال ڈار اور دیگر صحافی رہنماؤں نے کی۔ اس موقع پر صحافیوں کی طرف سے سینیٹ کی کارروائی کا بھی بائیکاٹ کیا گیا۔ جس کے بعد سینٹ کی کارروائی روک دی گئی۔

جبکہ اے این پی کے رہنما سینٹر زاہد خان اور سابق ایم این اے میاں اسلم اظہار یکجہتی کیلئے مظاہرے میں شریک ہوئے۔ کراچی میں پریس کلب پر سیاہ پرچم لہرانے اور احتجاجی مظاہرے کی قیادت سیکرٹری پی ایف یو جے خورشید عباسی، صدر کراچی پریس کلب امتیاز فاران اور چیئرمین ایپنک شفیع الدین اشرف نے کی۔ لاہور میں لاہور پریس کلب اور پنجاب یونین آف جرنلسٹس نے احتجاجی مظاہرہ کیا۔

جس کی قیادت صدر پی یو جے وسیم فاروق اور صدر لاہور پریس کلب ارشد انصاری، سیکرٹری محمد شہباز میاں اور محمد الیاس نے کی۔ مظاہرے میں سینئر صحافی حسین نقی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان صحافیوں کیلئے دنیا کا دوسرا خطرناک ترین ملک بن چکا ہے۔ پشاور میں پشاور پریس کلب اور خیبر یونین آف جرنلسٹس کے احتجاجی مظاہرے کی قیادت پریس کلب کے صدر ناصر حسین، جنرل سیکرٹری فدا عدیل، خیبر یونین آف جرنلسٹس کے صدر نثار اور سیکرٹری طارق عفاف نے کی۔

کوئٹہ میں بلوچستان یونین آف جرنلسٹس اور کوئٹہ پریس کلب کے زیراہتمام کوئٹہ پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس کی قیادت کوئٹہ پریس کلب کے صدر ضیاء الرحمن اور بی یو جے کے صدر عرفان سعید نے کی۔ اس موقع پر مقررین نے کہا کہ پی ایف یو جے کے صدر افضل بٹ کے مطالبہ پر بلوچستان میں شہید ہونے والے 30 صحافیوں کے قتل کی تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمیشن قائم کر دیا گیا ہے جبکہ حکومت نے ورثا کو معاوضہ پالیسی کے تحت معاوضے دینے کی بھی یقین دہانی کرائی ہے جبکہ 23 جنوری کو بلوچستان اسمبلی میں تمام پارلیمانی پارٹیوں کی طرف سے مشترکہ طور پر صحافیوں کی ٹارگٹ کلنگ کے خلاف قرارداد پیش کی جا رہی ہے۔

ملتان پریس کلب اور ملتان یونین آف جرنلسٹس کے زیراہتمام احتجاجی مظاہرے کی قیادت پی ایف یو جے کے فنانس سیکرٹری مظہر خان، ملتان یونین آف جرنلسٹس کے صدر عبدالرؤف مان اور ملتان پریس کلب کے صدر رانا پرویز نے کی۔ رحیم یار خان ریلوے چوک میں صحافیوں نے احتجاجی مظاہرہ کیا جس کی قیادت رانا محمد افضل نے کی۔ ایبٹ آباد پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کی قیادت صدر سردار نوید اور سیکرٹری عادل عباسی نے کی جبکہ سکھر میں احتجاجی مظاہرے کی قیادت ایس یو جے کے صدر جان محمد مہر اور سکھر پریس کلب کے صدر اسد پٹھان نے کی حیدر آباد میں احتجاجی مظاہرے کی قیادت صدر حیدر آباد پریس کلب اسحاق منگریو، میر پور خاص میں احتجاجی کی قیادت صدر پریس کلب سلیم کاظمی، لاڑکانہ میں، لاڑکانہ یونین آف جرنلسٹس کے صدر مرتضیٰ کلوڑو، گھوٹکی میں پریس کلب کے صدر رمضان چنا، خیر پور میں پریس کلب کے صدر غلام قادر سومرو، نوشہرو فیروز میں صدر پریس کلب یونس راجپر، دادو میں صدر پریس کلب ولی محمد بلوچ، ٹھٹھہ میں، ٹھٹھہ یونین آف جرنلسٹس کے صدر فیاض قریشی، کشمور میں پریس کلب کے صدر علی حسن ملک، جیکب آباد میں پریس کلب کے سیکرٹری مکیش روپیٹا، سانگھڑ میں پریس کلب کے صدر الیاس انجم، نواب شاہ میں پریس کلب کے نائب صدر رمضان تھیبو، گوجرانوالہ میں گوجرانوالہ یونین آف جرنلسٹس کے جنرل سیکرٹری مبشر حسین بٹ اور گوجرانوالہ پریس کلب کے صدر حافظ شاہد منیر اور جنرل سیکرٹری شفقت عمران نے احتجاجی مظاہرہ کی قیادت کی۔

سرگودھا میں سرگودھا پریس کلب کے صدر نعیم اختر خان اور نائب صدر شہزاد شیرازی، بھلوال میں پریس کلب کے صدر ملک امجد، جنرل سیکرٹری چوہدری رمضان، صدر الیکٹرونک میڈیا کلب تصور شیرازی نے احتجاجی مظاہروں کی قیادت کی۔ تمام شہروں میں احتجاجی مظاہروں سے قبل پریس کلبوں میں سیاہ پرچم لہرانے کی تقریبات منعقد ہوئیں اور بعدازاں احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔

اسلام آباد میں پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے مرکزی مظاہرے کی قیادت کرتے ہوئے صدر پی ایف یو جے افضل بٹ نے کہا کہ آئندہ دو روز میں تمام سرکاری تقریبات کی کوریج سیاہ پٹیاں باندھ کر کی جائے انہوں نے تمام اینکرز سے بھی اپیل کی کہ وہ اپنے شہید ساتھیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے بازو پر سیاہ پٹیاں باندھ کر پروگرام کریں۔ انہوں نے کہا یہ کسی ایک ادارے کی لڑائی نہیں بلکہ پوری صحافتی برادری کا مسئلہ ہے ہم ارباب اختیار سے مطالبہ کرتے ہیں کہ صحافیوں کو تحفظ فراہم کیا جائے۔

20/01/2014 - 21:31:06 :وقت اشاعت