سودی کاروبار معاشرے کیلئے ناسور ہے،خاتمہ ضروری ہے، جسٹس دوست محمدکھوسہ، ملک میں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر جنوری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 20/01/2014 - 20:32:01 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 20:32:01 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 20:32:01 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 20:27:19 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 20:27:19 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 20:27:19 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 20:26:20 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 20:26:20 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 20:24:13 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 20:24:13 وقت اشاعت: 20/01/2014 - 20:15:44
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

سودی کاروبار معاشرے کیلئے ناسور ہے،خاتمہ ضروری ہے، جسٹس دوست محمدکھوسہ، ملک میں ثالثی کے نام پر غریب کو لوٹا جاتا ہے ، سودی نظام کے خاتمے کیلئے کئی بار حکومت کو کہا لیکن معاملات جوں کے توں ہیں، چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔20 جنوری ۔2014ء)پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس دوست محمد خان نے کہاہے کہ سودی کاروبار معاشرے کیلئے ناسور ہے جس کے خاتمہ کیلئے کئی بار صوبائی حکومت کو احکامات جاری کئے لیکن معاملات جوں کے توں ہیں۔ چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ جسٹس دوست محمد خان نے یہ ریمارکس پیر کے روز غلام سرور نامی شخص کی جانب سے دائر رٹ کی سماعت کے دوران دئیے جس میں پٹیشنر غلام سرور نے اسد اللہ کے خلاف رٹ دائر کی ہے رٹ میں موقف اختیار کیا گیاہے کہ اسد اللہ نے دو کروڑ کا جعلی چیک کاروباری معاملات کی بناء پر غلام سرور کو دیاہے کیس کی سماعت کے دوران پشاور ہائی کورٹ کے چیف

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

20/01/2014 - 20:27:19 :وقت اشاعت