کراچی،معروف عالم دین مفتی عثمان یار خان نامعلوم مسلح افراد کی فائرنگ سے اپنے دو ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جنوری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 17/01/2014 - 23:18:46 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 23:18:46 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 23:17:51 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 23:17:51 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 23:17:51 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 22:46:21 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 22:07:02 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 22:07:02 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 21:52:25 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 21:52:25 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 21:52:25
- مزید خبریں

کراچی

کراچی،معروف عالم دین مفتی عثمان یار خان نامعلوم مسلح افراد کی فائرنگ سے اپنے دو ساتھیوں سمیت شہید

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔17 جنوری ۔2014ء) کراچی کے علاقے شاہراہ فیصل پر معروف عالم دین اور جمعیت علماء اسلام (س) سندھ کے سیکریٹری جنرل مفتی عثمان یار خان نامعلوم مسلح افراد کی فائرنگ سے اپنے دو ساتھیوں سمیت شہید ہوگئے۔ گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان، وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ، وزیر اطلاعات سندھ شرجیل انعام میمن نے دہشت گردی کے اس واقعہ پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جمعہ کی شام نامعلوم موٹر سائیکل مسلح ملزمان نے شاہراہ فیصل پر واقع عوامی مرکز اور لال قلعہ ہوٹل کے قریب سے گزرنے والی کار ٹویوٹا کرولا نمبر AXU-054 پر اندھا دھند فائرنگ کردی۔ جس کے نتیجے میں کار میں سوار چار افراد شدید زخمی ہوگئے۔ زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا جارہا تھا کہ جن میں سے تین افراد راستے میں ہی دم توڑ گئے۔

بعد ازاں جن کی شناخت جمعیت علماء اسلام (س) سندھ کے سیکریٹری جنرل مفتی عثمان یار خان، محمد علی اور رفیق کے نام سے کی گئی۔ دیگر ساتھیوں کا تعلق بھی جمعیت علماء اسلام (س) سے ہی تھا جبکہ زخمی ہونے والے شخص کی شناخت زاہد سعد اقبال کے نام سے ہوئی ہے۔ زخمی اور نعشوں کو جناح ہسپتال منتقل کردیا گیا۔ پولیس کے مطابق مفتی عثمان یار خان تنظیمی دورے کے بعد اپنے گھر جارہے تھے کہ نامعلوم مسلح افراد کی فائرنگ سے اپنے دو ساتھیوں سمیت جاں بحق ہوگئے۔

دریں اثناء وزیراعلیٰ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

17/01/2014 - 23:17:51 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان