بجلی کی پیداوار و ترسیل کے نظام کو بہتر بنانے کے منصوبوں کیلئے فنڈز کی نامنظوری ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جنوری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 17/01/2014 - 21:06:34 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 21:06:34 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 21:03:58 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 21:03:58 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 20:59:34 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 20:59:34 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 20:58:35 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 20:58:35 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 20:56:32 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 20:56:32 وقت اشاعت: 17/01/2014 - 20:56:32
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

بجلی کی پیداوار و ترسیل کے نظام کو بہتر بنانے کے منصوبوں کیلئے فنڈز کی نامنظوری قوم دشمنی کے مترادف ہے،سینیٹر زاہد خان، آئندہ کے اجلاس میں نیپرا اور این ٹی ڈی سی تحریری طور پر ٹیرف اور سبسڈی سے آگاہ کریں تاکہ پتہ چل سکے کہ قوم کے ساتھ کیا کیا جا رہا ہے،چیئرمین قائمہ کمیٹی پانی وبجلی

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔17 جنوری ۔2014ء) قائمہ کمیٹی پانی و بجلی کے چیئرمین سینیٹر زاہد خان نے کہا ہے کہ بجلی کی پیداوار و ترسیل کے نظام کو بہتر بنانے کے منصوبوں کیلئے منصوبہ بندی کمیشن کی طرف سے فنڈز کی نامنظوری قوم دشمنی کے مترادف ہے، توانائی کے بحران کو حل کرنے کے لئے منصوبہ بندی کمیشن جاری توانائی منصوبوں اور نئے منصبوں کیلئے فنڈز جاری کرے، وزارت پانی و بجلی کو ہر اجلاس میں ہدایت کی گئی کہ وزارت قانون کی رائے لے کر نیلم جہلم منصوبہ کیلئے فنڈز کا اجراء ممکن بنایا جائے لیکن تاحال عمل نہیں کیا گیا جس پر وزارت قانون کے نمائندہ نے آگاہ کیا کہ وزارت پانی و بجلی کی طرف سے کوئی تحریری تجویز نہیں بھیجی گئی۔

چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ نیپرا اور این ٹی ڈی سی کی طرف سے بجلی کے ٹیرف پر سبسڈی کیلئے دیئے گئے تحریری جوابات میں تضادات ہوتے ہیں ۔ چیئرمین کمیٹی زاہد خان نے اپنے ذاتی گھر کا بل کمیٹی کے اجلاس میں پیش کرتے ہوئے کہا کہ 25 یونٹ کے میرے بجلی کے بل میں 20 یونٹ تک 12 روپے 50 پیسے فی یونٹ اور 5 یونٹ کا بل18 روپے فی یونٹ بھیجا گیا ہے ۔ حالانکہ حکومت کا دعویٰ ہے کہ پچاس یونٹ تک سبسڈی دی جا رہی ہے۔

اسی طرح میرے دوسرے بل میں 151 یونٹ کا بل 12 روپے 50- پیسے اور 65 یونٹ کا بل 18 روپے فی یونٹ ہے ۔ واپڈا تو دھڑا دھڑ پیسہ کما رہا ہے اور عوام کو بھی لوٹا جا رہا ہے ۔ آئندہ کے اجلاس میں نیپرا اور این ٹی ڈی سی تحریری طور پر ٹیرف اور سبسڈی سے آگاہ کریں تاکہ پتہ چل سکے کہ قوم کے ساتھ کیا کیا جا رہا ہے۔ چیئرمین کمیٹی نے سیکرٹری منصوبہ بندی این ٹی ڈی سی نیپرا اور واپڈا کے چیئرمین و ایم ڈی کی غیرحاضری پر سخت ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پارلیمانی کمیٹی دلجمعی سے توانائی بحران حل کرنے کے لئے کوشاں ہیں لیکن بیوروکریسی کی مسلسل غیرسنجیدگی اور اجلاسوں میں غیرحاضری کا حکومت نوٹس لے آئندہ اجلاس میں شرکت نہ کرنے والے وزارتوں کے سیکرٹریز کے وزراء کو نوٹس جاری کئے جائیں گے اور کہا کہ منڈا ڈیم اور چک درہ گریڈ اسٹیشن کا معاملہ مسلسل چار سال سے تاخیر کا شکار ہے اور منصوبہ بندی کمیشن سے فنڈز کی منظوری نہیں دی جا رہی۔

سینیٹر شاہی سید نے وزیر مملکت عابد شیر علی کو یاد دلایا کہ انہوں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

17/01/2014 - 20:59:34 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان