رواں مالی سال ملکی ترقی کیلئے مقررہ کردہ شرح نمو حاصل ہونے کی توقع نہیں ہے، سٹیٹ ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ جنوری

مزید تجارتی خبریں

وقت اشاعت: 15/01/2014 - 22:04:18 وقت اشاعت: 15/01/2014 - 20:40:07 وقت اشاعت: 15/01/2014 - 20:37:06 وقت اشاعت: 15/01/2014 - 13:25:55 وقت اشاعت: 15/01/2014 - 13:25:20 وقت اشاعت: 15/01/2014 - 13:25:20 وقت اشاعت: 15/01/2014 - 13:23:49 وقت اشاعت: 15/01/2014 - 13:23:49 وقت اشاعت: 15/01/2014 - 13:23:49 وقت اشاعت: 15/01/2014 - 13:22:50 وقت اشاعت: 15/01/2014 - 13:22:50
- مزید خبریں

کراچی

رواں مالی سال ملکی ترقی کیلئے مقررہ کردہ شرح نمو حاصل ہونے کی توقع نہیں ہے، سٹیٹ بینک،دہشت گردی کیخلاف جنگ میں پاکستان کا مالی خسارہ کولیشن سپورٹ فنڈ سے زیادہ ہے، جنگ میں انسانی جانوں کے نقصان کے علاوہ امن و امان کی صورتحال بھی خراب ہورہی ہے،جائزہ رپورٹ مالی سال 2012-13

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔15 جنوری ۔2014ء)اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے گزشتہ مالی سال 2013 2012 کی جائزہ رپورٹ جاری کردی ہے جب کہ اسٹیٹ بینک کا کہنا ہے کہ رواں مالی سال ملکی ترقی کے لئے مقرر کیا جانے والا شرح نمو حاصل ہونے کی توقع نہیں ہے۔ بدھ کو جاری کی گئی مالی سال 2012-13 کی جائزہ رپوٹ میں کہاگیا ہے کہ گزشتہ مالی سال میں بہت سارے معاشی اہداف حاصل نہیں ہوسکے تھے جب کہ رواں مالی سال کے دوران ملکی ترقی کیلئے 4.4 مقرر کیا جانے والا شرح نمو حاصل ہونے کی توقع نہیں ہے جب کہ رواں مالی سال مہنگائی بھی ہدف سے زیاہ رہے گی جس کی وجہ بجلی کے بڑھتے ہوئے نرخ، روپے کی قدر میں کمی ، جی ایس ٹی میں اضافہ اور اس کے علاوہ گندم کے کم ذخائر بھی ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ذراعت کے شعبے میں گنے کی فصل کے علاوہ کسی فصل کی کارکردگی قابل ذکر نہیں رہی، جب کہ توانائی بحران کا خاتمہ حکومت کی ترجیح میں شامل ہے لیکن نجی شعبے میں روزگار کے مواقع بڑھانا بھی حکومت کی ترجیحات میں شامل ہونا چاہئے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 2014 میں نیٹو افواج کے انخلا سے کولیشن سپورٹ فنڈ بڑھ سکتا ہے لیکن دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کا مالی خسارہ کولیشن سپورٹ فنڈ سے زیادہ ہے۔

اس جنگ میں انسانی جانوں کے نقصان کے علاوہ امن و امان کی صورتحال بھی خراب ہورہی ہے جس سے پاکستان میں سرمایہ کاری کا ماحول بھی شدید متاثر ہوا اور بہت سارے کاروباری حضرات ملک چھوڑ کر جارہے ہیں۔ رپورٹ میں اسٹیٹ بینک کی جانب سے حکومت کو مشورہ دیا گیا ہے کہ معیشت کی بہتری کیلئے ٹیکس نیٹ بڑھانے، توانائی کی چوری اور دستاویزی معیشت کے مسائل حل کرنے کی ضرورت ہے جو اس وقت جوں کے توں ہیں۔

پورٹ میں کہا گیا کہ تعمیراتی سرگرمیوں میں بھرپور نمو اور چند ذیلی شعبوں کی استعداد میں اضافے سے صنعتی شعبے کو فائدہ ہوا۔ عالمی نرخوں سے پاکستان

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/01/2014 - 20:40:07 :وقت اشاعت