حکومت کا عدالتی اصلاحات کا پیکیج آئین کے خلاف نہیں ہے ، ترک پارلیمنٹ کے جسٹس کمیشن ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر جنوری

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 13/01/2014 - 12:59:26 وقت اشاعت: 13/01/2014 - 12:59:26 وقت اشاعت: 13/01/2014 - 12:58:52 وقت اشاعت: 13/01/2014 - 12:58:52 وقت اشاعت: 13/01/2014 - 12:58:52 وقت اشاعت: 13/01/2014 - 12:58:14 وقت اشاعت: 13/01/2014 - 12:58:14 وقت اشاعت: 13/01/2014 - 12:58:14 وقت اشاعت: 13/01/2014 - 12:57:26 وقت اشاعت: 13/01/2014 - 12:57:26 وقت اشاعت: 13/01/2014 - 12:57:26
پچھلی خبریں - مزید خبریں

حکومت کا عدالتی اصلاحات کا پیکیج آئین کے خلاف نہیں ہے ، ترک پارلیمنٹ کے جسٹس کمیشن کا فیصلہ

استنبول(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 13جنوری 2014ء)ترک پارلیمنٹ کے جسٹس کمیشن نے قرار دیا ہے کہ حکومت کا عدالتی اصلاحات کا پیکیج آئین کے خلاف نہیں ہے جبکہ کمیشن کے فیصلے کے بعد وزیراعظم رجب طیب اردوان نے کہاہے کہ حکومت عدالتی اصلاحات پر عمل کرے گی۔ استنبول میں میڈیا سے گفتگو کے دوران وزیراعظم رجب طیب اردوان نے بتایا کہ جسٹس کمیشن کے اجلاس میں عدالتی اصلاحات پیکیج پر ووٹنگ ہوئی۔

اراکین کی اکثریت نے اصلاحاتی پیکیج کو آئین کے مطابق قرار دیتے ہوئے اس کے حق میں ووٹ دئیے۔ کمیشن کی منظوری کے بعد اب عدالتی اصلاحات پیکیج پارلیمنٹ میں پیش کیا جائیگا۔ ترک وزیراعظم نے کہا کہ سفارشات کا مقصد یہ نہیں ہے کہ حکومت آئین کے خلاف کوئی کام کرنا چاہتی ہے۔ عدالتی اصلاحات کے خلاف گزشتہ روز پارلیمنٹ میں اپوزیشن نے حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے شدید ہنگامہ آرائی کی تھی۔

13/01/2014 - 12:58:14 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان