وزیراعلی خیبرپختونخوا نے مارچ سے طبقاتی نظام تعلیم ختم کر کے صوبہ بھر میں یکساں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
اتوار جنوری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 12/01/2014 - 20:35:27 وقت اشاعت: 12/01/2014 - 20:35:27 وقت اشاعت: 12/01/2014 - 20:33:28 وقت اشاعت: 12/01/2014 - 20:33:28 وقت اشاعت: 12/01/2014 - 20:30:16 وقت اشاعت: 12/01/2014 - 20:30:16 وقت اشاعت: 12/01/2014 - 20:22:24 وقت اشاعت: 12/01/2014 - 20:22:24 وقت اشاعت: 12/01/2014 - 20:20:24 وقت اشاعت: 12/01/2014 - 19:59:47 وقت اشاعت: 12/01/2014 - 19:49:36
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

وزیراعلی خیبرپختونخوا نے مارچ سے طبقاتی نظام تعلیم ختم کر کے صوبہ بھر میں یکساں نظام تعلیم نافذ کرنے کا اعلان کردیا،کارکن بلدیاتی انتخابات کی تیاری کریں جس میں حقیقی معنوں میں لوگوں کو مقامی سطح پر بااختیار بنانے کا نظام متعارف کیا جا رہا ہے ،پرویزخٹک

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔12 جنوری ۔2014ء)خیبرپختونخواکے وزیراعلیٰ پرویزخٹک نے اگلے مہینے مارچ سے طبقاتی نظام تعلیم ختم کر کے صوبہ بھر میں یکساں نظام تعلیم نافذ کرنے کا اعلان کیا ہے وزیر اعلیٰ نے پی ٹی آئی کے کارکنوں پر بھی زور دیا ہے کہ وہ بلدیاتی انتخابات کی تیاری کریں جس میں حقیقی معنوں میں لوگوں کو مقامی سطح پر بااختیار بنانے کا نظام متعارف کیا جا رہا ہے کارکن لوگوں کو بتائیں کہ ان کا امیدوار اگر تحریک انصاف کی حکومت میں نہ ہو تو اپنا ووٹ ضائع سمجھیں وہ دورہ ہری پور کے دوران نواحی گاؤں کاگ میں سابق ناظم یو سی جٹی پنڈ اعجاز خان کی ہزاروں حامیوں اور ساتھیوں سمیت تحریک انصاف میں شمولیت کے موقع پر منعقدہ اجتماع سے خطاب کر رہے تھے اس موقع پر پاکستان تحریک انصاف کے صوبائی صدر اعظم سواتی،جنرل سیکرٹری خالد مسعود، وزیراعلی کے مشیر میاں جمشیدالدین، ضلعی صدر کمال غزنوی، سابق صوبائی وزیر مواصلات و تعمیرات یوسف ایوب خان اور دیگر پارٹی راہنماء، کارکنان اور عمائدین علاقہ کی خطیر تعداد میں موجود تھے پرویز خٹک نے کہا کہ تحریک انصاف نے عام انتخابات میں تبدیلی لانے کا وعدہ کیا تھا اور تبدیلی گلی ،نالی،سڑک، پل، ہسپتال اور سکول بنانے سے نہیں آئے گی بلکہ تب آئے گی جب ہم اس گلے سڑے اور فرسودہ نظام کو تبدیل کر غریب عوام کو لوٹ کھسوٹ اور ظلم و ناانصافی و استحصال سے نجات دلائیں گے اس کے لیے پہلے امیر و غریب کے درمیان فرق ختم کرنا ضروری ہے اور وہ پہلا بڑا فرق طبقاتی نظام تعلیم کا ہے جسے ہم نے ختم کرنے کے لیے تمام ہوم ورک مکمل کر لیا ہے اور اگلے مہینے نئے تعلیمی سال کے آغاز سے ہی خیبرپختونخوا میں طبقاتی نظام تعلیم ختم کر کے امیر و غریب سب کے بچوں کیلئے یکساں نظام لاگو کریں گے جو معاشرے میں حقیقی معنوں میں پر امن انقلاب کی بنیاد ہو گا کیونکہ اس

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

12/01/2014 - 20:30:16 :وقت اشاعت