جرائم کے خاتمے کیلئے کام کررہے ہیں، 171اہلکار گھر بیٹھے شہید نہیں ہوئے ،ایڈیشنل ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات جنوری

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 09/01/2014 - 21:52:24 وقت اشاعت: 09/01/2014 - 21:44:10 وقت اشاعت: 09/01/2014 - 18:23:54 وقت اشاعت: 09/01/2014 - 18:23:54 وقت اشاعت: 09/01/2014 - 18:23:27 وقت اشاعت: 09/01/2014 - 18:23:27 وقت اشاعت: 09/01/2014 - 16:53:26 وقت اشاعت: 09/01/2014 - 16:53:26 وقت اشاعت: 09/01/2014 - 16:53:26 وقت اشاعت: 09/01/2014 - 16:51:44 وقت اشاعت: 09/01/2014 - 13:39:30
- مزید خبریں

کراچی

جرائم کے خاتمے کیلئے کام کررہے ہیں، 171اہلکار گھر بیٹھے شہید نہیں ہوئے ،ایڈیشنل آئی جی کراچی ، آپریشن سے قتل کی وارداتوں میں 40 فیصد کمی آئی،زندگی اور موت اللہ کے ہاتھ میں ہے ، حالات کی بہتری کیلئے قربانیاں دینی پڑتی ہیں،شاہد حیات، وقت آگیا عوام کو سب کچھ سچ سچ بتائیں شہر میں پلاٹوں کی چائنہ کٹنگ میں کون لوگ ملوث ہیں، 450ملزمان کی فہرست چند روز میں جاری کردی جائیگی، کسی سیاسی جماعت کا عسکری ونگ ہوگا تو دیگر جماعتیں بھی اپنے عسکری ونگ قائم کریں گی،یہاں کوئی خوشی اور کوئی مجبوری سے بھتہ دیتا ہے ،”آباد“ کے ظہرانے سے خطاب

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔9 جنوری ۔2014ء) ایڈیشنل آئی جی کراچی شاہد حیات نے کہا ہے کہ پولیس جرائم کے خاتمے کے لئے کام کررہی ہے لیکن ہمیں بھتہ مافیا کے خلاف کارروائی میں مشکلات کا سامنا ہے۔ 171 اہلکار گھر بیٹھے شہید نہیں ہوئے ، ٹارگٹڈ آپریشن سے قتل کی وارداتوں میں 40 فیصد کمی آئی ہے۔زندگی اور موت اللہ کے ہاتھ میں ہے ، حالات کی بہتری کے لیے قربانیاں دینی پڑتی ہیں۔

اب وقت آگیا ہے کہ ہم عوام کو سب کچھ سچ سچ بتائیں کہ شہر میں پلاٹوں کی چائنہ کٹنگ میں کون لوگ ملوث ہیں۔ سنگین جرائم میں ملوث 450ملزمان کی فہرست چند روز میں جاری کردی جائے گی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو کراچی میں ایسوسی ایشن آف بلڈرز اینڈ ڈیولپرز پاکستان کی جانب سے دیئے گئے ظہرانے سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ایڈیشنل آئی جی کراچی شاہد حیات نے کہا کہ پولیس کی کارروائیوں کے باعث شہر میں جرائم کی شرح کم ہوئی ہے، 5 دسمبر سے 31 دسمبر تک مختلف علاقوں میں ہونے والے پولیس مقابلے کے دوران 41 ملزمان ہلاک ہوئے۔

انہوں نے کہا کہ زندگی اور موت اللہ کے ہاتھ میں ہے لیکن حالات کی بہتری کے لئے قربانیاں دینا پڑتی ہیں اور جب سے کراچی پولیس کے سربراہ کی حیثیت سے ذمہ داریاں سنبھالی ہے شہر کے حالات کی بہتری کے لئے ہی کام کررہا ہوں اور اس دوران میرے 171 جوان اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرچکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ ہم عوام کو سب کچھ سچ سچ بتائیں کہ شہر میں پلاٹوں کی چائنہ کٹنگ میں کون ملوث ہیں،ہمیں بتانا ہوگا لوگ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09/01/2014 - 18:23:27 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان