جوہری تجربات کے کئی دہائیوں بعد تک تابکارانہ ذرات فضا کی اونچی سطح میں معلق رہتے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ جنوری

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 08/01/2014 - 12:58:58 وقت اشاعت: 08/01/2014 - 12:58:58 وقت اشاعت: 08/01/2014 - 12:58:13 وقت اشاعت: 08/01/2014 - 12:58:13 وقت اشاعت: 08/01/2014 - 12:58:13 وقت اشاعت: 08/01/2014 - 12:57:20 وقت اشاعت: 08/01/2014 - 12:57:20 وقت اشاعت: 08/01/2014 - 12:57:20 وقت اشاعت: 08/01/2014 - 12:56:23 وقت اشاعت: 08/01/2014 - 12:56:23 وقت اشاعت: 08/01/2014 - 12:56:23
پچھلی خبریں - مزید خبریں

جوہری تجربات کے کئی دہائیوں بعد تک تابکارانہ ذرات فضا کی اونچی سطح میں معلق رہتے ہیں ،نئی تحقیق

لندن (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 8جنوری 2014ء)نئی تحقیق میں کہا گیا ہے کہ جوہری تجربات کے کئی دہائیوں بعد تک تابکارانہ ذرات فضا کی اونچی سطح میں معلق رہتے ہیں۔میڈیا رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں کے مطابق زمین کی سطح کے قریب جوہری ذرات کی تعداد اب تک انتہائی کم ہو چکی ہوگی تاہم تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ پلوٹونیئم اور کیسیئم کی چند قسمیں ابھی بھی حیران کن حد تک زیادہ مقدار میں موجود ہیں۔

یہ تحقیق نیچر کمیونیکیشنز نامی سائنسی جریدے میں شائع کی گئیں۔سوئٹزرلینڈ میں لاؤسان یونیورسٹی ہسپتال کے انسٹیٹیوٹ آف ریڈی ایشن فززکس سے منسلک اس تحقیق کے مرکزی مصنف ڈاکٹر ہوزے کورکو الواردو نے کہاکہ جوہری دھماکے کے چند ہی سالوں میں زیادہ تر تابکارانہ ذرات ختم ہو جاتے ہیں تاہم ان میں سے کچھ فضا کی انتہائی اونچی سطح میں کئی دہائیوں بلکہ کئی صدیوں تک رہ سکتے ہیں تاہم انہوں نے کہاکہ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

08/01/2014 - 12:57:20 :وقت اشاعت