فرنٹیئر کور بلوچستان کی پنجگور کے علاقے چتکان بازار میں مطلوب شرپسند کی موجودگی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل جنوری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 07/01/2014 - 23:23:08 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 23:23:08 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 23:23:08 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 22:35:15 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 22:34:57 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 22:31:01 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 22:30:08 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 22:30:08 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 22:28:08 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 22:23:04 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 22:23:04
- مزید خبریں

کوئٹہ

کوئٹہ شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 23/01/2017 - 00:00:07 وقت اشاعت: 23/01/2017 - 12:31:25 وقت اشاعت: 23/01/2017 - 15:36:19 وقت اشاعت: 23/01/2017 - 15:38:41 وقت اشاعت: 23/01/2017 - 15:38:43 وقت اشاعت: 23/01/2017 - 16:20:46 کوئٹہ کی مزید خبریں

فرنٹیئر کور بلوچستان کی پنجگور کے علاقے چتکان بازار میں مطلوب شرپسند کی موجودگی کی اطلاع پر کارروائی ،کارروائی کے دوران شرپسند کو گرفتار ی سے بچانے والے پولیس اہلکار کی فائرنگ سے ایف سی جوان شہید ، جوابی کارروائی سے پولیس اہلکار جاں بحق، ساتھی زخمی،ترجمان ایف سی

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔7 جنوری ۔2014ء) فرنٹیئر کور بلوچستان کی گذشتہ روز پنجگور کے علاقے چتکان بازار میں ایک مطلوب شرپسند کی موجودگی کی اطلاع پر کارروائی کارروائی کے دوران شرپسند کو گرفتاری سے بچانے والا پولیس اہلکار کی فائرنگ سے ایک ایف سی اہلکار شہید جبکہ فرنٹیئر کور کی بروقت جوابی فائرنگ سے پولیس اہلکار خود جاں بحق اور اس کا ساتھی زخمی تفصیلات کے مطابق 2جنوری کو فرنٹیئر کور بلوچستان کو خفیہ اطلاع موصول ہوئی کہ کالعدم تنظیم کا ایک شرپسند جو سیکورٹی فورسز پر حملوں میں ملوث ہے چتکان بازار میں موجود ہے جس پر ایف سی کی گشتی پارٹی نے اسے بازار سے گرفتار کرنے کی کوشش کی شرپسند ایف سی اہلکاروں کو دیکھتے ہی قریبی گلی میں فررار ہواجس کا ایف سی اہلکاروں نے تعاقب کیا اور شرپسند کو گرفتار کرنے ہی والے تھے کہ اسی اثناء مین موٹر سائیکل وار دو افراد نے ایف سی اہلکاروں کر وکے اور شرپسند کو بھگانے کی کوشش کی جس پر فرنٹیئر کور بلوچستان کے اہلکاروں نے بارہا ان موٹر سائیکل سوار افراد کو کار سرکار میں مداخلت کرنے سے روکا لیکن موٹر سائیکل سوار باز نہ آئے بالاآخر ایف سی اہلکاروں نے دونوں کو گرفتار کرنے کی کوشش کی جس پر دونوں افراد نے مشتعل ہوکر ایف سی اہلکار وں پر 9ایم ایم پستول سے فائر کھول دی جس سے فرنٹیئر کور بلوچستان کا ایک جوان نائیک محمد اختر شدید زخمی ہوا جوکہ بعد میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے فرنٹیئر کور ہسپتال پنجگور میں جام شہادت نوش کر گیا جبکہ فرنٹیئر کور کی بروقت جوابی کارروائی سے شرپسند کو بچانے والے دونوں افراد زخمی ہوئے جن میں سے ایک نے موقع پر دم توڑ دیا تاہم شرپسند فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے دونوں افراد کی تلاشی لینے پر معلوم ہوا ہے کہ شرپسند کو بچانے والے سول کپڑوں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

07/01/2014 - 22:31:01 :وقت اشاعت