2013 ءمیں بھی شہر کراچی امن کو ترستا رہا، 2700 افراد لقمہ اجل بن گئے
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل جنوری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 07/01/2014 - 13:57:42 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 13:56:24 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 13:56:24 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 13:56:24 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 13:03:50 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 13:03:50 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 12:56:45 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 12:17:04 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 12:14:46 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 12:14:46 وقت اشاعت: 07/01/2014 - 12:14:46
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

2013 ءمیں بھی شہر کراچی امن کو ترستا رہا، 2700 افراد لقمہ اجل بن گئے

span class=\"location\">کراچی(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 7جنوری 2014ء)
شہر میں گزشتہ سال بھی بدامنی کے اندھیرے دورنہ ہوئے حکومت کے دعوؤں اور سیکیورٹی اداروں کے آپریشنزکے باوجود گزشتہ سال 2700افراد کوموت کی نیند سلا دیاگیا۔ذرائع کے مطابق 2013 کا سال روشنیوں کے شہر کراچی کی تاریخ کا سب سےخونی سال رہا جس میں 2700 افرادزکو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا اورسیکڑوں افرادزخمی ہوکرزندگی کے ساتھ چلنے کے قابل نہ رہے۔

سندھ پولیس اوررینجرزکی رپورٹس میں ہزاروں جرائم پیشہ افراد کی گرفتاری کا دعوی توہوا لیکن مختلف جرائم کے 40 ہزار848واقعات ان رپورٹس کا منہ ہی چڑاتے رہے۔ قتل، بھتہ خوری، اغوا برائے تاوان، ڈکیتی، چوری اوردہشت

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

07/01/2014 - 13:03:50 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان