غداری کیس میں مشرف کی حاضری، وکلاء نے استثنیٰ مانگ لیا
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات جنوری

اسلام آباد

غداری کیس میں مشرف کی حاضری، وکلاء نے استثنیٰ مانگ لیا

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 2 جنوری 2014ء) سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف غداری کیس کی سماعت جسٹس فیصل عرب کی سربراہی میں خصوصی عدالت کا تین رکنی بنچ کر رہا ہے۔ کیس کی سماعت کے دوران پرویز مشرف اور عدالتی وکلاء کے درمیان شدید گرما گرمی اور تلخ کلامی شروع ہو گئی .دونوں جانب سے ایک دوسرے کو دھمکیاں بھی دی گئیں۔ پرویز مشرف کے وکیل رانا اعجاز کا خصوصی عدالت کے روبرو کہنا تھا کہ حکومتی وکیل \'\'اکرم شیخ نے سابق صدر پرویز مشرف کو جوتا مارنے کی دھمکی دی ہے\'\'۔

اکرم شیخ خود کو ہیرو اور وزیراعظم نواز شریف کو چیتا سمجھتے ہیں۔ اکرم شیخ وزیراعظم سے وعدہ کرکے آئے ہیں کہ وہ پرویز مشرف کی تضحیک کریں گے. پرویز مشرف کے وکیل انور منصور کا کہنا تھا کہ صرف مجھے یہ کیس لینے کی وجہ سے مشکلات کا سامنا ہے۔ ساری رات میرے گھر کی گھنٹی بجائی جاتی رہی. میں ساری رات سو نہیں سکا۔ مجھے دھمکیاں بھی دی جا رہی ہیں۔

میری گاڑی پر حملہ بھی ہو چکا ہے. گزشتہ 40 سال میں اس صورتحال کا سامنا نہیں کرنا پڑا۔ جس پر بنچ کے سربراہ جسٹس فیصل عرب نے کہا کہ آپ کو مکمل سیکورٹی فراہم کرنے کا حکم جاری کرتے ہیں تاہم ایڈووکیٹ انور منصور کا کہنا تھا

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

02/01/2014 - 11:29:01 :وقت اشاعت