صوبے میں بجلی لوڈشیڈنگ کے خاتمے کیلئے بھرپوراقدامات اٹھارہے ہیں،پرویزخٹک، کمشنرز ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ جنوری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 01/01/2014 - 22:29:00 وقت اشاعت: 01/01/2014 - 21:53:53 وقت اشاعت: 01/01/2014 - 21:53:53 وقت اشاعت: 01/01/2014 - 21:41:56 وقت اشاعت: 01/01/2014 - 21:40:08 وقت اشاعت: 01/01/2014 - 21:36:29 وقت اشاعت: 01/01/2014 - 21:36:29 وقت اشاعت: 01/01/2014 - 21:36:29 وقت اشاعت: 01/01/2014 - 21:30:22 وقت اشاعت: 01/01/2014 - 21:30:22 وقت اشاعت: 01/01/2014 - 21:30:22
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

صوبے میں بجلی لوڈشیڈنگ کے خاتمے کیلئے بھرپوراقدامات اٹھارہے ہیں،پرویزخٹک، کمشنرز بجلی چوری کی روک تھام اور بروقت بل ادائیگی و بقایاجات کی وصولی میں واپڈا ملازمین سے ا تعاون کریں،چند کنڈا ماروں اور بجلی چوروں کی سزا پورے علاقے کے لوگوں کو دینا اور انہیں اضافی لوڈ شیڈنگ کا نشانہ بنانا انتہائی بے انصافی ہے ،وفد سے گفتگو

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔یکم جنوری ۔2014ء)خیبرپختونخواکے وزیراعلیٰ پرویزخٹک نے صوبے بھر کے کمشنروں اور ڈپٹی کمشنروں کو ہدایت کی ہے کہ ملک میں توانائی کے بڑھتے ہوئے بحران اور لوڈ شیڈنگ کے پیش نظر بجلی چوری کی روک تھام اور بروقت بل ادائیگی و بقایاجات کی وصولی میں واپڈا ملازمین سے پورا تعاون کریں انہوں نے واپڈا ملازمین پر بھی زور دیا ہے کہ خیبر پختونخوا سے تعلق اور ایک بڑے قومی ادارے سے وابستگی کے باعث وہ یہاں ناروا و ظالمانہ لوڈشیڈنگ کی روک تھام میں کردار کریں کیونکہ یہ ہم سب کا صوبہ ہے کسی شہر یا گاؤں کی ہزاروں کی آبادی میں چند کنڈا ماروں اور بجلی چوروں کی سزا پورے علاقے کے لوگوں کو دینا اور انہیں اضافی لوڈ شیڈنگ کا نشانہ بنانا انتہائی بے انصافی اور کاروباری و پیشہ ورانہ جرم بھی ہے جس سے واپڈا ملازمین کو گریز کرنا چاہئے وہ آل پاکستان واپڈا ہائیڈرو ورکرز یونین کے پچاس رکنی وفد سے باتیں کر رہے تھے جس نے مرکزی چئیرمین گوہر علی تاج کی زیرقیادت ان سے سی ایم سیکرٹریٹ پشاور میں ملاقات کی اور اپنے بعض مسائل و مطالبات سے انہیں اگاہ کیا وفد نے لوڈ شیڈنگ سے متعلق ارکان اسمبلی اور شہریوں کا واپڈا ہاؤس کے سامنے احتجاج پر اعتراف کیا کہ یہ انتہائی پرامن و منظم تھا تاہم لوڈشیڈنگ قومی مسئلہ بن چکا ہے جو انکے بس میں نہیں تاہم مختلف علاقوں میں صارفین کے احتجاج سے واپڈا ملازمین براہ راست متاثر ہوتے ہیں اسلئے صوبائی حکومت کے ساتھ ساتھ وہ مرکز سے بھی بجلی کے اس پیداواری صوبے کو ریلیف دینے کی اپیل اور عوام و حکومت سے پورا تعاون کرینگے وفد نے وزیراعلیٰ کو واپڈا ہاؤس بھی مدعو کیا تاکہ واپڈا افسران و ملازمین سے ملاقات میں لوڈ شیڈنگ سے متعلق وضاحت ہو اور صوبائی حکومت و عوام کے خدشات، تشویش اور بدگمانیوں کو دور کیا جا سکے جسے انہوں نے بخوشی قبول کرتے اور واپڈا ملازمین کے صوبائی حکومت سے متعلق تمام جائز مسائل کے حل کا یقین دلاتے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

01/01/2014 - 21:36:29 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان