بند کریں
جمعہ مارچ

حالیہ تبصرے

sajjadmasud 15-03-2015 15:29:49

کامیاب سیاست يا گدهون كي تجارت

  مضمون دیکھئیے
مزمل عباس 15-02-2015 19:37:32

شاندار۔۔۔۔ یہ کام تو ابھی شروع کر دینا چائیے۔

  مضمون دیکھئیے
اشفاق احمد 14-02-2015 13:07:43

ہم بڑے بے غیرت ہیں کہ پھر بھی باز نہیں آتے

  مضمون دیکھئیے
مھمد سعید 06-02-2015 16:20:07

Impact of Energy Crisis on Textile Industry in Pakistan Pakistan is one of the prime cotton-producing countries of the world. Both directly and indirectly, textile zone employs are the major number of the human source for the economic progress of the country. This industry roughly contributes more than 60 % (US $ 9.6 billion) to the country’s entire exports and gives approximately 46 % to the total productivity of the country (8.5%of the GDP). In Asia, Pakistan is the 8th greatest exporter connected with textile products, providing for 38% occupation. Right now, main problems are being sustained by this industry with closing looms around. The reasons of this debility are principally subsidized by the extraordinary cost of fabrication due to increase in the energy expenditures. The worldwide decline which has hit the global textile actually static is not the only reason for alarm. The high charge of manufacture is because of rise in the energy costs which has been the primary cause of concern for the industry. Slowdown in the textile sector has to be recovered. Energy Crisis As an impact of load-shedding the textile production capability of various sub-sectors has been reduced by more than 30%. The load-shedding of power is the reason of a rapid reduction in production which also reduced the export order. The price tag of manufacturing has also increased due to nonstop increase in electricity bill. Due to load shedding some mill owner uses alternative source of energy like generator which further increase their cost of production. The industry had gradually adapted to the shortfall of electricity in the country by installation of power plants running on natural gas. Almost 80% of the textile industry in Punjab alone shifted to natural gas to meet the energy shortfall. This added capacity helped meet the demand for power for the industry quite effectively for a number of years. However, in the last couple of years the supply of natural gas to the industry has been severely curtailed due to the increased demand by the domestic consumers and the transportation sector. The gas is now curtailed for a number of days every week. Projected demand/supply position of natural gas in 2011-12 supply was 4,172 mmcfd against demand of 5,777 mmcfd, showing a shortfall of 1,605 mmcfd. In 2012-13, supply is around 4,372 mmcfd whereas demand is 5,995 mmcfd indicating a shortfall of 1,622 mmcfd. A spokesman for the All Pakistan Textile Mills Association (APTMA) claimed that 60 to 70 per cent of the industry had been affected and unable to accept export orders coming in from around the globe. He said the textile industry had already endured over 45 days of gas disconnection over a period of four months, causing extraordinary production losses and badly affecting capability of the industry. In Punjab, energy supply disruption only was causing an estimated loss of Rs1 billion per day. In the larger interest of the economy and exports, he suggested, the government should “ensure utility companies provide smooth electricity and gas supply to the textile industry. To restore the industry interest is to manage shortfall of electricity & gas tariff and supply. The gas shortage increases to 600mmcfd in Punjab at the peak of winter season. This is one of the most important reasons that the textile industry lacks to meet the yearly export target. Because of shortage of gas many of textile units are closed ,so numbers of people has lose their jobs. Conclusions: This is no doubt the toughest periods for the industry in decades. Serious internal issues affected Pakistan’s textile industry very badly. The high cost of production resulting from an instant rise in the energy costs has been the primary cause of concern for the industry. Moreover, we also need a safe working environment in our textile and garments manufacturing industries where both genders are treated equally, and share equal respect and status, without any sort of discrimination or gender bias. It is high time that alternative sources of energy such as coal, solar and wind power should be considered without any loss of time. Pakistan is sitting on one of the richest deposits of coal in the world. According to renowned scientist Dr Samar Mubarak and, Thar coal reserves have potential to generate 5000 MW electricity for 800 years. Incredibly, Thar has 850 trillion cubic feet coal which far greater than the total oil reserves of Saudi Arabia and Iran put together! Coal gasification is already being used successfully by some forward looking players in the textile industry. Through such ingenious and creative solutions, dependency on the gas and power companies can be curtailed significantly for the industry to meet its full potential.

  مضمون دیکھئیے
ساجدہ 28-01-2015 10:58:51

جی آپ صعیع کہہ رہے ھیں فرنچائزز والے عوام کی سا تھہ تعا ون نہیں کر رہے ھیں۔ مرد حضرات پھر بھی بعا لت مجبوری دو تین بار چکر لگا لیتا ہے ۔ لیکں خواتین کا گھر سے نکلنا مشکل ہو تا ہے۔ سسٹم تو دن میں تین چار چکر لگا نے کے بعد بھی یہی جواب ملتا ہے کہ سسٹم ٹھیک نہیں۔ اب بندہ کرے تو کیا کرے۔ فرنچائزز گھر وں سے قر یب بھی نہیں ہو تے۔ شر یف عوام کے جان کےویسے للالے پڑے ہوئے ھھں۔ گھر سے نکلنا تو در کنا ر گھروں کے اندر بھی ان کی عزت، جان و مال معفو ظ نہیں۔ کیو ں کہیں بھی علا قے کے اندر کچھ ہو جائے قا نوں نا فذ کر نے والے آپ کو گھر سے اٹا کر لے جا ئیں گے۔ اللہ ہم سب کا حامی وا نا صر ہو آمین۔

  مضمون دیکھئیے
ساجدہ 27-01-2015 12:23:39

اللہ کرے ایسا ہو جائے تو پاکستا ن کو کوئی بھی ترقی سے نہیں روک سکتا۔ ہما ری حکومتیں کام یا کوئی پروجیکٹ شروع کرتے ہیں لیکن کچھ عرصے بعد پتہ نہیں چلتا کہ وجہ کیا ہو تی کہ ختم کر دیتے ہیں۔ عوام صرف خبروں کے ذریعے پتہ چل جاتا ہیں لیکں عوا م تو بیچارے کیا کر سکتے صرف دعا کرسکتے ہیں کہ حکو مت صیع فیصلے کرنے کا تو فیق دے۔ امین۔ پا کستان پا ہندہ باد

  مضمون دیکھئیے

مضامین و انٹرویوز

سانحہ یوحنا آباد۔۔۔ملک بھر کی وکلاء بارز بھی سراپا احتجاج

دہشت گردی کے اس واقعے پر پوری قوم کی طرح وکلاء برادری بھی رنج و غم میں ڈوبی دکھائی دی۔ پاکستان بار کونسل نے اس واقعے کے خلاف 16 مارچ کو یوم سیاہ منانے کا اعلان کیا

"قومی مضامین" میں شائع کیا گیا

تاریخ اشاعت: 2015-03-18

یوحنا آباد میں چرچز پر خودکش حملے
مسیحی بھائیوں کی دو دعائیہ تقاریب خون میں ڈوب گئیں

مسیحی بھائیوں کی دو دعائیہ تقاریب خون میں ڈوب گئیں۔۔۔۔ ان دھماکوں کے بعد سکیورٹی اداروں کی پلاننگ کا فقدان نظر آیا۔پولیس حکام موقع پرپہنچے

"قومی مضامین" میں شائع کیا گیا

تاریخ اشاعت: 2015-03-17

فاٹا

اسے محفوظ بنائے بغیر شدت پسندی کا خاتمہ ممکن نہیں۔۔۔۔
فاٹا قدرت کی مصوری کا اعلیٰ نمونہ ہے لیکن یہی خوبصورت وادیاں شدت پسندوں کیلئے محفوظ پنا ہ گاہیں بننے کی اہلیت بھی رکھتی ہیں

"قومی مضامین" میں شائع کیا گیا

تاریخ اشاعت: 2015-03-14

عدم توازن کا شکار پاکستان معیشت

اس کا باوا آدم ہی نرالا ہے۔۔۔۔۔
واجب الادا قرضوں کا حجم 65 ارب ڈالر سے تجاوز کر چکا ہے ٹیکس چوروں کی اکثریت حکومت ایوانوں میں بستی ہے

"معیشت و کاروبار" میں شائع کیا گیا

تاریخ اشاعت: 2015-03-14

نواز شریف اور آصف زرداری کی سیاست!!!

جمہوریت کے مخالفین کو سخت پیغام دے دیا۔۔۔۔
اس دوران تحریک انصاف پس منظر میں چلی گئی اور تنہا ہو گئی۔ اسلام آباد میں تمام پارلیمانی پارٹیوں کے اتحاد کا مظاہرہ قابل دید ہے

"سیاسی مضامین" میں شائع کیا گیا

تاریخ اشاعت: 2015-03-13

وزیر اعلیٰ پنجاب کے دعوے ٹُھس،” پولیس گردی“ قابو سے باہر!

اعلیٰ افسروں کی بیرون ملک تربیت پولیس کاروایتی رویہ بدلنے میں ناکام۔۔۔
تفتیش کے جدید طریقوں کی بجائے تشدد کا آسان طریقہ اختیار کر لیا گیا ہے

"قومی مضامین" میں شائع کیا گیا

تاریخ اشاعت: 2015-03-12

صوبوں کی کار کردگی مثبت انداز میں ہونی چاہیے

نیشنل ایکشن پلان کا نفاد۔۔۔ ایک جائزہ۔۔۔۔
قوم کو دہشت گردی کے عفریت سے نجات دلانے کیلئے سیاسی مصلحتوں سے بالا تر ہو کر کام کرنا ہو گا

"قومی مضامین" میں شائع کیا گیا

تاریخ اشاعت: 2015-03-12

ترقیاتی منصوبے …ملتان کاچہرہ نکھر رہا ہے!!

ملتان کا نیا ائرپورٹ بھی مکمل ہو چکا ہے او ر اس پر طیاروں کا اُتار اور روانہ کر کے اس کی آزمائش بھی کر لی گئی ہے جو سو فیصد کامیاب رہی۔ اس پر اب بڑے طیارے بھی اتر اور چڑھ سکیں گے

"متفرق مضامین" میں شائع کیا گیا

تاریخ اشاعت: 2015-03-11

گوادر روٹ تبدیل کرنے پر احتجاج

وزیر اعلیٰ ڈاکٹر مالک اپنا اقتدار مضبوط کرنے میں مصروف۔۔۔۔۔
بلوچستان میں اغواء برائے تاوان، قتل اور دہشت گردی کے واقعات میں اضافہ

"قومی مضامین" میں شائع کیا گیا

تاریخ اشاعت: 2015-03-10

بجلی کا بحران

تمام شعبہ جات جن میں صنعت اور زراعت بھی شامل ہیں کی ترقی کے حوالے سے بات کی جائے تو ان کی پیداوار پچھلے مالی سال سے بہت کم رہی ہے جیسا کہ صنعتی ترقی جولائی سے نومبر2013ء میں 6فیصد تھی

"قومی مضامین" میں شائع کیا گیا

تاریخ اشاعت: 2015-03-10

قرطبہ

بنی اُمیہ کے چھٹے خلیفہ عبدالملک کے عہدِ حکومت میں ایک مشہور سپہ سالار طارق بن زیاد نے یہ ملک فتح کیا تھا۔ جس مقام پربہادر طارق پہلی مرتبہ اُترے تھے وہ جیل الطارق (انگریزی میں جبرالٹر) کے نام سے مشہور ہے

"تحقیقاتی فیچرز" میں شائع کیا گیا

تاریخ اشاعت: 2015-03-09

پیپلز پارٹی سینٹ میں اکثریتی جماعت بن گئی

سینیٹ کی52 میں سے 48نشستوں انتخابات مکمل ہو گئے ہیں فاٹا کے ارکان کا انتخاب صدارتی حکم کے ذریعے انتخابی طریقہ کار تبدیل ہونے کی وجہ سے ملتوی کر دیا گیا وفاقی دارالحکومت اسلام آباد اور چاروں صوبوں میں سینیٹرز منتخب کئے گئے

"سیاسی مضامین" میں شائع کیا گیا

تاریخ اشاعت: 2015-03-09

فہرست 13 سے 24  تک   (6044 ریکارڈز )