بکھرے ہوئے بادل واشنگٹن
6.2°C
شہر تبدیل کریں | موسم کی پیشن گوئی 🔄
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات،23جمادی الثانی 1435ھ،24اپریل2014ء

آج کا سوال

سینئر صحافی حامد میر پر قاتلانہ حملے کے بعد جیو نیوز کی جانب سے آئی ایس آئی کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل ظہیر الاسلام کو مورد الزام ٹھہرایا گیا ہے، وزارت دفاع نے جیو نیوز کی بندش کیلئے پیمرا کو درخواست جمع کروا دی ہے، آپ کے خیال میں کیا جیو نیوز کا آئی ایس آئی سربراہ کو موردالزام ٹھہرانا درست اقدام تھا؟ جیو نیوز کی بندش سے دفاعی اداروں پر الزامات روکے جا سکیں گے؟
آپ اس سوال پر ووٹ دینے کے علاوہ اپنا تبصرہ بھی شامل کر سکتے ہیں۔
آئی ایس آئی سربراہ کو حامد میر پر حملہ کے بعد مورد الزام ٹھہرانا غلط تھا، خفیہ اداروں‌پر الزام تراشی سے گریز کرنا چاہئے۔
حامد میر کا آئی ایس آئی سربراہ کو مورد الزام ٹھہرانا ذاتی موقف ہے۔ جیو نیوز کی بندش سے خفیہ اداروں پر الزامات میں کمی نہیں آئے گی۔
نتائج
سوال پر رائے دیجئے۔

دوسرے قارئین کی رائے پڑھئیے۔

حالیہ تبصرے

محمد عثمان لیاقت 24-04-2014 10:43:56

بہت اچھی بات ہے

  مضمون دیکھئیے
ہارون الرشید گوندل 24-04-2014 10:40:10

ریاض ملغانی صاحب یہ سالا حامد میر کب سے ملک و قوم کا سرمایہ ہو گیا یہ حرام زادہ تو پاکستان کے نام پر ہی دهبہ ہے افسوس کے یہ زندہ بچ گیا

  مضمون دیکھئیے
تنو یر ا حمد 24-04-2014 10:01:41

ا ن غد ا ر و ں کو بین کر کے پھا نسی پے لٹکا د و

  مضمون دیکھئیے
آصف جاوید 24-04-2014 09:35:44

خبر یں صرف پاکستانی ہونی چاہیے اور مثبت پہلو اجاگر کرنا چاہیے

  مضمون دیکھئیے
ممعد سعید ولد ممعد عبد اللہ ماڑی انڈس۔۔ 24-04-2014 09:04:16

میرا نام معمد سعید ہے اور معیں ماڑی انڈس میں ریتا ہوں کافی عرصے سے ہمارے علا قے سے گیس گژررہی ھعے لیکن ماڑی انڈس کو نیں مل سکی ۔ صرف سیاسی چکر معیں میری بھرپور ..

  مضمون دیکھئیے
مھمد ادریس 24-04-2014 08:50:59

غداری برداشت ناھی ھوگی۔

  مضمون دیکھئیے

تلاش کیجئے

تازہ ترین خبریں (2014-04-24)

کراچی، خود کش حملے میں انسپکٹر شفیق تنولی سمیت 4افراد جاں بحق ،15 سے زائد زخمی

کراچی میں پرانی سبزی منڈی کے قریب خود کش حملے میں انسپکٹر شفیق تنولی سمیت 4 افراد جاں بحق ہو گئے ہیں جبکہ پندرہ سے زائد افراد زخمی ہیں۔ شفیق تنولی اپنے گھر کے قریب تھے کہ خودکش حملہ آور نے اپنے آپ کو اڑا لیا۔دھماکے کے بعد امدادی ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں اور زخمیوں کو قریبی ہسپتال منتقل کیا گیا۔خود کش حملہ آور کی عمر 30 سے 35 برس تھی۔شفیق تنولی کے بھائی نے بتایا کہ میں اعلیٰ پولیس اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کرائوں گا ،دھمکیوں کے باوجود میرے بھائی کو سیکیورٹی فراہم نہیں کی گئی۔واضح رہے کہ معطل انسپکٹر شفیق تنولی پر اس سے قبل سات حملے ہو چکے ہیں ایک حملہ اسی جگہ ان کے گھر کے قریب ہوا تھا جس میں وہ بچ گئے تھے۔معطل انسپکٹر شفیق تنولی طالبان کیخلاف کارروائی میں اہمیت کے حامل تھے۔

اہم خبریں -بین الاقوامی خبریں -فن و فنکار -کھیل -

وزیراعلیٰ پنجاب پرصحافی نےجوتا پھینک دیا:

وقت اشاعت: 24/04/2014 - 12:03:07

اسلام آباد ایئرپورٹ پر مسافر کے سامان سے 5 کلو گرام ہیروئن برآمد، ملزم گرفتار:

وقت اشاعت: 24/04/2014 - 11:54:20

حکومت جمہوری روایات کی مضبوطی اور آزادی اظہار پر یقین رکھتی ہے، وزیراعظم:

وقت اشاعت: 24/04/2014 - 11:45:52

تھری اور فور جی نیلامی کے بعد مزید 4 ارب ڈالر سرمایہ کاری متوقع:

وقت اشاعت: 24/04/2014 - 11:41:58

جیٹ طیاروں کی خیبرایجنسی میں بمباری،متعدد دہشت گرد ہلاک،بھاری جانی نقصان ہوا :

وقت اشاعت: 24/04/2014 - 11:33:30

کراچی، خود کش حملے میں انسپکٹر شفیق تنولی سمیت 4افراد جاں بحق ،15 سے زائد زخمی:

وقت اشاعت: 24/04/2014 - 11:30:03