بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مارچ

آج کی اہم خبریں (2016-03-30)

”را“ کے ایجنٹ کا اعتراف ریاستی دہشتگردی،دنیا میں اسکی کوئی مثال نہیں ملتی،ڈی جی آئی ایس پی آر،بھارتی ایجنٹ انسانی اور اسلحہ سمگلنگ میں ملوث تھے، کل بھوشن دیو کو گوادر ہوٹل میں دھماکے کا ٹاسک دیا گیا جہاں چینی مقیم تھے ، دفتر خارجہ کے ذریعے بھارتی ہائی کمشنر کو ”را“ کی مداخلت سے اگاہ کیا،ایرانی صدر کے ساتھ بھی معاملہ اٹھایا،ملک میں جہاں بھی دہشتگرد ہوں گے کارروائی ہوگیٍ،راولپنڈی کے گردونواح اور ملتان میں آپریشن ہو رہے ہیں، جنوبی پنجاب میں دہشتگردوں کے نیٹ ورک کی اطلاعات ہیں،وزیراطلاعات پرویز رشیدکے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس

مذاکرات سے معاملہ حل نہ ہوا تو ( آج )دن کی روشنی میں ڈی چوک خالی کرایا جائے گا ، حکومت دھرنا دینے والوں سے کوئی مذاکرات نہیں کر رہی ،کچھ علماء کرام انتظامیہ کے ساتھ مل کر مسئلہ حل کرانے کی کوشش کر رہے ہیں،سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے والوں کی تصاویر محفوظ ہیں ان کو چن چن کر گرفتار کیا جائے گا،کسی کو قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جائے گی ،موبائل فون بند ہونے پر عوام سے معذرت کرتا ہوں ،موبائل سروس (آج )بحال ہو جائے گی ،وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کی پریس کانفرنس

بھارت نے ”را“ کے افسر کل بھوشن یادو کے اعترافی ویڈیو بیان کو سختی سے مستردکردیا،بھارتی شہری تک قونصلر رسائی نہ دیئے جانے پر مایوسی ہوئی ، کل بھوشن کے بیان کی حقیقت میں کوئی بنیاد نہیں ،یہ بات درست نہیں کہ وہ ہمارے کہنے پر پاکستان میں تخریبی سرگرمیوں میں ملوث تھا ، کل بھوشن ایران میں ایک جائزہ کاروبار کررہا تھا جسے وہاں سے اغواء کرکے لائے جانے کا خدشہ ہے،بھارتی وزارت خارجہ کا بیان

پنجاب بھر میں دہشتگردوں کے خلاف آپریشن میں سیکورٹی ایجنسیاں ،پولیس ،رینجرزاور مسلح افواج شامل ہیں:رانا ثناء اللہ،پنجاب میں آپریشن کا فیصلہ حکومت اور فوج کا مشترکہ ہے ،صوبے میں کوئی نو گوایریا نہیں ہے ، گلشن اقبال پارک قومی سانحہ ہے اس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہو گی دہشتگردوں نے سیر و تفریح کرنے والے معصوم پھولوں کو نشانہ بنایا ہے ،مشترکہ پریس کانفرنس

حکومت دھرنے والوں کے خلاف کارروائی سے اجتناب کرے،مفتی منیب الرحمن،کسی حادثہ کی صورت میں علماء کا لاتعلق رہنا ناممکن ہوجائے گا، پر یس کانفرنس

بھارت نے پٹھانکوٹ حملے کی تحقیقات کے حوالے سے مولانا مسعود اظہر تک رسائی مانگ لی

”را“ نے کراچی اور بلوچستان کی پاکستان سے علیحدگی کا ایجنڈا دیا،کل بھوشن یادیو،1987ء میں کراچی کے حالات خراب کرنے کی ذمہ دار ”را“تھی،فرقہ وارانہ تنظیموں کو مدد فراہم کی، بھارتی نیوی کی انجینئرنگ برانچ سے منسلک رہا،بلوچ باغیوں کو مدد فراہم کرتا رہا،فنڈز افغان کورےئر کے ذریعے منگوائے جاتے،ایرانی ویزہ لگوا کر چاہ بہار میں کام کیا،گرفتار بھارتی ایجنٹ کا ویڈیو بیان

حساس اداروں نے رمضان شوگر مل سے بھارتی باشندوں کا ریکارڈ قبضہ میں لے لیا، رمضان شوگر مل کے مہمان کے طور پر پاکستان کا دورہ کرنیوالے بھارتی باشندوں کے زیر استعمال موبائل فون ریکارڈ کے ذریعے تعلق داروں سے تحقیقات کرنے کا فیصلہ،رمضان شوگر ملز میں انجینئرنگ کنسلٹینسی کے نام پر ایک وقت میں 40 بھارتی باشندوں کو سرکاری پروٹوکول میں لایا اور لیجایا جاتا رہا، ویزے لاہور اور چنیوٹ تک محدود تھے،وزیراعلیٰ پنجاب کے سرکاری پروٹوکول کی زیر نگرانی بھارتی باشندوں کو رمضان شوگر مل میں چھپا کر رکھا گیا اور دوسرے شہروں تک بھی رسائی دی گئی،دستاویزات، 14 اکثر واپس بھارت چلے جاتے ، 26 باشندے رمضان شوگر ملز میں موجود ہوتے ،تمام بھارتی باشندوں کو ویزے کے اجراء سے پہلے پولیس رپورٹ سے بھی استثنیٰ دیا گیا

150 میگا سکینڈل کی تحقیقات مکمل،نیب کل رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرائے گا،میگا سکینڈلز میں 22 بڑے سکینڈل فنانشل کرپشن،27 لینڈ سکینڈل ،ہاؤسنگ سوسائٹیوں کے سکینڈل‘ اختیارات کا ناجائز استعمال اور کرپشن پر 71 اعلیٰ افسران کے خلاف ہیں،تحقیقات مکمل لیں،حتمی رپورٹ عدالت میں دائر کی جائے گی، سکینڈلز میں مجرموں نے قوم کے اربوں روپے لوٹے ہیں، الزامات ثابت کرنے کے ٹھوس شواہد مل گئے،ذرائع

پاکستان افغان امن مذاکرات کے حوالے سے اپنے وعدوں کو پورا کرنے میں سنجیدہ نہیں،افغان نائب وزیر خارجہ

روز ویلٹ ہوٹل کی نجکاری کا عمل ابھی شروع ہی نہیں ہوا

پارلیمنٹ میں ہندو اور مسیحی ممبران کی جانب سے شراب پر پابندی کا بل منظور کرنے میں مسلمان ارکین اسمبلی رکاوٹ ہیں ، مولانا محمد خان شیرانی،عوام کو شراب نوشی کی راہ میں رکاوٹ بننے والے اراکین اسمبلی کا گھیراؤ کرنا چاہیے، میڈیا سے بات چیت

پاکستانی تحقیقاتی ٹیم نے پٹھان کوٹ ایئر بیس پہنچ کر تحقیقات شروع کر دی،پٹھان کوٹ حملے کی تحقیقات میں کانگریس اور عام آدمی پارٹی بھی روڑے اٹکانے لگی ، پاکستانی تحقیقاتی ٹیم کی پٹھان کوٹ آمد کے موقع پر ایئر بیس کے باہر احتجاج ، تحقیقاتی ٹیم کو مر کزی دروازے سے بھی داخلے کی اجا زت نہ دی گئی