حکومت معاشرے سے نا انصافی ، بدعنوانی اور اقرباء پروری کے خاتمے کے لیے کوشاں ہے،محمدعاطف
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جون

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 03/06/2016 - 21:36:59 وقت اشاعت: 03/06/2016 - 21:16:40 وقت اشاعت: 03/06/2016 - 20:52:24 وقت اشاعت: 03/06/2016 - 20:47:17 وقت اشاعت: 03/06/2016 - 19:56:21 وقت اشاعت: 03/06/2016 - 19:45:46 وقت اشاعت: 03/06/2016 - 18:45:30 وقت اشاعت: 03/06/2016 - 18:45:30 وقت اشاعت: 03/06/2016 - 18:39:11 وقت اشاعت: 03/06/2016 - 18:32:35 وقت اشاعت: 03/06/2016 - 18:19:32
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

پشاور شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 18/01/2017 - 13:18:22 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 17:25:13 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 17:51:32 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 17:51:44 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 17:59:23 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 17:59:23 پشاور کی مزید خبریں

حکومت معاشرے سے نا انصافی ، بدعنوانی اور اقرباء پروری کے خاتمے کے لیے کوشاں ہے،محمدعاطف

قانون کی حکمرانی،جمہوریت کی بالادستی اور انصاف کی فراہمی میں وکلاء کے کردار سے انکار نہیں کیا جاسکتا،وزیرتعلیم خیبرپختونخوا

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔03 جون۔2016ء)صوبائی وزیر ابتدائی وثانوی تعلیم محمد عاطف خان نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کی اتحادی حکومت معاشرے سے نا انصافی ، بدعنوانی اور اقرباء پروری کے خاتمے کے لیے کوشاں ہے اور اس مقصد کے لیے حکومتی اقدامات اور قانون سازی کے دور رس نتائج برآمد ہوئے ہیں ۔قانون کی حکمرانی،جمہوریت کی بالادستی اور انصاف کی فراہمی میں وکلاء کے کردار سے انکار نہیں کیا جاسکتا۔

وہ ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن مردان کے نومنتخب عہدیداروں کی حلف برداری کی تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کر رہے تھے ۔تقریب سے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج مردان ابراہیم خان نے بھی خطاب کیا جبکہ بار کے صدر امیر حسین نے سپاسنامہ پیش کیا ۔محمد عاطف خان نے کہا کہ سرکاری محکموں کے معاملات میں شفافیت لانے اور ان کو عوام کے سامنے جوابدہ بنانے کے لیے رائٹ ٹو انفارمیشن کا قانون بنایا گیا جبکہ خدمات تک رسائی کے لیے الگ سے قانون سازی کی گئی ہے جس کے ذریعے صوبائی محکموں سے متعلق خدمات کے حصول کے لیے باقاعدہ ایک نظام الاوقات کا تعین کیا گیا ہے ۔

اُنہوں نے کہا کہ مردان صوبے کا دوسرا بڑا شہر اور اہم سیاسی مرکز ہے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

03/06/2016 - 19:45:46 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان