نئے مالی سال کے بجٹ اعلان سے پہلے شبانہ روز محنت کرکے 100فیصد اہداف کا حصول ممکن ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مئی

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 04/05/2016 - 22:08:48 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 22:07:34 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 22:07:34 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 22:04:43 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 22:04:43 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 22:01:39 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 21:59:46 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 21:59:46 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 21:50:49 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 21:49:43 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 21:47:22
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

نئے مالی سال کے بجٹ اعلان سے پہلے شبانہ روز محنت کرکے 100فیصد اہداف کا حصول ممکن بنا دیا جائیگا، مظفر سید ایڈووکیٹ

وفاق کے عدم تعاون اور مالی مشکلات کے باوجود عوام دوست، ٹیکس فری اور فلاحی بجٹ پیش کرنے کی کوشش کی جائیگی، وزیر خزانہ خیبر پختونخوا

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔04 مئی۔2016ء)خیبر پختونخوا کے وزیر خزانہ مظفر سید ایڈوکیٹ نے گزشتہ مالی سال کے بجٹ اعلانات پر عمل درآمد میں واضح پیشرفت پر متعلقہ صوبائی وزراء اور محکموں کے انتظامی سیکرٹریوں کی کاکردگی کو سراہا ہے اور امید ظاہر کی ہے کہ نئے مالی سال کے بجٹ اعلان سے پہلے شبانہ روز محنت کرکے سو فیصد اہداف کا حصول ممکن بنا دیا جائے گا انہوں نے کہا کہ وفاق کے عدم تعاون اور انتہائی مالی مشکلات کے باوجود اس مرتبہ زیادہ عوام دوست، ٹیکس فری اور فلاحی بجٹ پیش کرنے کی پوری کوشش کی جائے گی اور اس ضمن میں محکمانہ مشاورت کی بدولت حقیقت پسندانہ بنیادوں پر زیادہ واضح اہداف اور سفارشات مرتب کی جائیں گی وہ سول سیکرٹریٹ پشاور کے کانفرنس روم میں انکی زیرصدارت گزشتہ بجٹ تقریر میں کئے گئے اعلانات پر پیشرفت اور نئے مالی سال کیلئے بجٹ تجاویز پر مشاورت کے سلسلے میں منعقدہ دو روزہ اجلاس کی افتتاحی نشست سے خطاب کر رہے تھے اجلاس میں سکندر خان شیرپاؤ، عنایت اﷲ خان، محمد عاطف خان، حبیب الرحمان، حاجی قلندر خان لودھی، میاں جمشیدالدین کا کا خیل، امتیاز شاہد قریشی اور عارف یوسف سمیت مختلف محکموں کے وزراء ، مشیروں، معاونین خصوصی اور انتظامی سیکرٹریوں نے شرکت کی اور اپنے محکموں کی کارکردگی اور ترجیحات سے وزیرخزانہ کو اگاہ کیا مظفر سید ایڈوکیٹ نے واضح کیا کہ محکمے بروقت اہداف اور فنڈز کے منصفانہ و شفاف استعمال کو یقینی بنا دیں تو نہ صرف یہ فلاحی و رفاعی ادارے بن جائیں گے بلکہ تعلیم و صحت سمیت تمام سماجی شعبے بھی صرف حکومتی گرانٹس پر انحصار کی بجائے اپنے پاؤں پر کھڑے ہونے اور قابل آمدن ادارے بن جائیں گے انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت کا اولین مقصد سرکاری محکموں کی کارکردگی نمایاں بہتر بنا کر ان پر عوامی اعتماد کی بحالی ہے اور ایسا کرپشن اور دیگر بدعنوانیوں کے خاتمے کے بغیر ممکن نہیں اس سلسلے میں سیاسی، بیوروکریسی اور عوامی سطح پر تعاون قابل تحسین ہے وزیرخزانہ نے محکمہ خوراک کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے اعتراف کیا کہ بظاہر میڈیا کی نظروں سے اوجھل اسکی حسن کارکردگی مستقبل میں غذائی تحفظ اور خودکفالت

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

04/05/2016 - 22:01:39 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان