سورن سنگھ کے قتل سے متعلق ٹی ٹی پی کا دعویٰ حقیقت پر مبنی نہیں ۔ڈی آئی جی مالاکنڈ ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر اپریل

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 25/04/2016 - 11:51:56 وقت اشاعت: 25/04/2016 - 11:51:56 وقت اشاعت: 25/04/2016 - 11:48:17 وقت اشاعت: 25/04/2016 - 11:44:53 وقت اشاعت: 25/04/2016 - 11:44:53 وقت اشاعت: 25/04/2016 - 11:44:07 وقت اشاعت: 25/04/2016 - 11:40:11 وقت اشاعت: 25/04/2016 - 11:40:10 وقت اشاعت: 25/04/2016 - 11:40:09 وقت اشاعت: 25/04/2016 - 11:40:05 وقت اشاعت: 25/04/2016 - 11:40:05
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

سورن سنگھ کے قتل سے متعلق ٹی ٹی پی کا دعویٰ حقیقت پر مبنی نہیں ۔ڈی آئی جی مالاکنڈ کی پریس کانفرنس

پشاور(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔25 اپریل 2016ء): ڈی آئی جی مالاکنڈ آزاد خان نے سورن سنگھ کے قتل سے متعلق پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ سورن سنگھ کے قتل کا مقدمہ ان کے بیٹے کی مدعیت میں درج کیا گیا جس میں دہشت گردی کی دفعات بھی شامل کی گئی ہیں۔ سورن سنگھ کے قتل کے الزام میں اب تک چھ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے ۔ ڈی آئی جی مالاکنڈ نے بتایا کہ گرفتار ملزمان نے اعتراف جرم بھی کر لیا ہے۔

ڈی آئی جی نے بتایا کہ گرفتار ملزمان میں سے ایک پی ٹی آئی کا عہدیدار بھی ہے، بلدیو کمار الیکشن لڑنا چاتا تھا، لیکن ٹکٹ نہ ملنے پر اس نے سورن سنگھ کو قتل کر دیا۔ انہوں نے بتایہا کہ سورن سنگھ کے قتل میں پی ٹی آئی کا عہدیدار بلدیو کمار اور ن لیگ کا نائب ناظم عالم خان ملوث ہیں، عالم خان

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

25/04/2016 - 11:44:07 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان