جماعت اسلامی کا اپنے اب تک کے ارکان قومی و صوبائی اسمبلی و سینیٹرز کو احتساب کیلئے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ اپریل

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 09/04/2016 - 19:51:31 وقت اشاعت: 09/04/2016 - 19:51:31 وقت اشاعت: 09/04/2016 - 19:51:31 وقت اشاعت: 09/04/2016 - 19:50:25 وقت اشاعت: 09/04/2016 - 19:50:25 وقت اشاعت: 09/04/2016 - 19:50:25 وقت اشاعت: 09/04/2016 - 19:46:14 وقت اشاعت: 09/04/2016 - 19:44:22 وقت اشاعت: 09/04/2016 - 19:44:22 وقت اشاعت: 09/04/2016 - 19:43:28 وقت اشاعت: 09/04/2016 - 19:43:28
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

جماعت اسلامی کا اپنے اب تک کے ارکان قومی و صوبائی اسمبلی و سینیٹرز کو احتساب کیلئے پیش کرنے کا اعلان

ظالم مسلم ہو یا غیر مسلم سب کیخلاف ہیں،وزیر اعظم کا خاندان ٹیکس چوری کا ملزم ہے ،کمیشن بنانے کا حق حاصل نہیں،سراج الحق کا پشاور میں اقلیتی کنونشن سے خطاب

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔09 اپریل۔2016ء)جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سراج الحق نے کہا ہے کہ نواز شریف ٹیکس چرانے کا ملزم ہے ،ملزم کو کمیشن بنانے کا کوئی حق نہیں جس ایوان نے انھیں وزیر اعظم بنایا ہے اسی کے ارکان کا حق ہے کہ وہ کمیشن بنائے اور پاکستان کے پارلیمنٹ کے ارکان کا مطالبہ ہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان کی سربراہی میں کمیشن بنایا جائے جو آف شور کمپنیاں بنا کر ٹیکس چرانے اور قومی خزانے کو نقصان پہنچانے کے الزامات کی تحقیقات کرے اور ملزم کو سزا بھی دے۔

ملزم کی جا نب سے اپنی مرضی کے ریٹائر جج کی سربراہی میں میں انھوں نے کہا کہ ہم کرپشن کمیشن کا قیام محض دھوکہ ہے عوام اس دھوکہ میںآ نے والے نہیں۔وہ ہفتہ کے روزڈسٹرکٹ کونسل ہال پشاور میں جماعت اسلامی خیبر پختونخواکے زیر اہتمام اقلیتی کنونشن سے خطاب کر رہے تھے۔کنونشن سے جماعت اسلامی پاکستان کے نائب امیر اسد اللہ بھٹو،صوبائی امیر مشتاق احمد خان،سینئر صوبائی وزیر برائے دیہی ترقی و بلدیات عنایت اللہ خان ،صوبائی نائب امیر ڈاکٹر محمد اقبال خلیل،جماعت اسلامی اقلیتی ونگ کے صوبائی صدر سابق ایم این اے پرویز مسیح اورجاوید گل نے بھی خطاب کیا۔

کنونشن میں صوبہ بھر سے اقلیتی برادری کے سینکڑوں عمائدین نے شرکت کی۔جماعت اسلامی کے مرکزی امیر نے اپنے خطاب میں کہا کہ پانامہ لیکس میں حکمرانوں اور اپوزیشن کے ارکان کے علاوہ پاکستان کے دو سو خاندانوں کے نام آئے ہیں۔ حکومت کے وزیر خزانہ لوگوں سے ٹیکس اور بجلی کے بل جمع کرنے کی اپیلیں کرتے نہیں تھکتے اور ان کے وزیر اعظم اربوں ڈالر ٹیکس ادائیگی سے چھپا کر بیرون ملک کاروبار میں لگاتے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ آئس لینڈ کے وزیر اعظم نے اپنی بیوی پر ٹیکس چرانے کا لزام لگنے کے بعد مستعفی ہونے کا اعلان کیا تاکہ آزادانہ انکوائری میں رکاوٹ نہ بنیں اور ہمارے وزیر اعظم اپنے بیٹوں اور خاندان پر الزامات لگنے کے بعد اپنی مرضی کے ریٹائر جج کی سربراہی میں کمیشن بنا کر عوام کی آنکھوں میں دھول جھونک رہے ہیں ۔انھوں نے کہا کہ پاکستان کا بچہ بچہ قرضوں کی جال میں پھنسا ہوا ہے۔

لاکھوں لوگ راتوں کو بھوکے سوتے ہیں ۔نوجوان ہاتھوں میں ڈگریاں لے کر روزگار کی تلاش میں مارے مارے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09/04/2016 - 19:50:25 :وقت اشاعت